آسیہ بی بی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

پاکستان میں ایک عیسائی عورت آسیہ بی بی جس نے حضرت محمد کی شان میں گستاخی کی اور اپنا جرم عدالت میں قبول کیا۔ پنجاب کے گورنر سلمان تاثیر نے اس کی حمایت میں قانون توہین رسالت میں ترمیم کرانے کی کوشش کی اور اسے کالا قانوں کہا۔ اس گورنر کو ملک ممتاز حسین قادری نے قتل کردیا۔


اندرونی حوالہ جات[ترمیم]






بیرونی حوالہ جات[ترمیم]


Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔