اشور بنی پال

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
اشور بنی پال

دور حکومت 669۔ 626ء ق م

اشوریہ کا بادشاہ۔ بابی لونیا مصر ، (جنوب مغربی ایران) فلسطین اور شام کا فاتح ۔ 650 ق م میں مصر اس کے قبضے سے نکل گیا۔ لیکن 648ء میں اس نے بابی لونیا کی بغاوت کو سختی سے کچل دیا۔ اس نے اپنے عہد میں عالی شان مندر اور محل تعمیر کرائے ۔ علما و فضلا کا سر پرست تھا۔ اشوریہ کے درالحکومت نینوا میں اس نے ایک عظیم کتب خانہ(لائبریری) کی بنیاد رکھی جو اس عہد کا انمول علمی خزانہ تھا۔جس میں ایک اندازے کے مطابق دس سے پچیس ہزار تکالواح سفالی(مٹی کی تختیوں ) پرلکھا تحریری مواد تھا جس کا کچھ حصہ اببرٹش میوزیممیں محفوظ ہے۔ اس کی وفات کے بعد اہل بابل نے 612 ق م مدائن اور فارس کے لوگوں کی مدد سے نینوا پر چڑھائی کی اور اس کی اینٹ سے اینٹ بجادی ۔ شہر کی تمام آبادی موت کے گھاٹ اتار دی گئی۔ اس کے بعد سلطنت اشوریہ حرف غلط کی طرح مٹ گئی۔

مزیددیکھیں[ترمیم]

کتب خانہ اشور بنی پال