البدایہ والنہایہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

تاریخ اسلام کی یہ مشہور و معروف کتاب عماد الدين ابو الفداء اسماعيل بن عمر بن كثير بن ضو بن كثير قرشی دمشقی شافعی المعروف ابن کثیر کی تصنیف ہے۔ اس میں 767ھ / 1357ء تک کے واقعات جمع ہیں۔ حافظ ابن کثیر کی یہ تاریخ علماء میں بڑی مستند تصور کی جاتی ہے۔ اس میں عام تاریخی واقعات کے علاوہ مشاہیر، علماء و عرفاء کے حالات بھی عمدگی سے بیان کئے گئے ہیں۔

مشمولات[ترمیم]

البدایہ والنہایہ 21 ابواب یا حصوں پر مشتمل ہے جس کی تفصیل یوں ہے۔

  • پہلا باب۔
  • دوسرا باب
  • تیسرا باب
  • چوتھاباب
  • پانچواں باب
  • چھٹا باب
  • ساتواں باب
  • آٹھواںباب
  • نواں باب
  • دسواں باب
  • گیارھواں باب
  • بارھواں باب
  • تیرھواں باب
  • چودھواں باب
  • پندرھواں باب
  • سولھواں باب
  • سترھواں باب
  • اٹھارواں باب
  • انیسواں باب
  • بیسواں باب
  • اکیسواں باب

طباعت و اشاعت[ترمیم]

یہ کتاب 9 جلدوں میں مطبع السعادہ مصر سے شائع ہو چکی ہے۔ اس کتاب کی دوسری سے چھٹی تک کی پانچ جلدیں سیرت سے متعلق ہیں۔ اس کتاب کا یہ مخصوص حصہ سیرت ابن کثیر کے نام سے الگ سے 4 جلدوں میں بھی شائع ہو چکا ہے۔