اوسٹریکا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
پیریکلس کے نام والا اوسٹریکا

دنیا کی مختلف قومیں اپنے حقوق اور اپنے ہاں جمہوریت کے تحفظ کے لیۓ مختلف طریقے اختیار کرتی ہیں۔ قدیم یونان کی جمھوریہ ایتھنز کے لوگوں نے یہ مشاہدہ کیا کہ دو طرح سے ان کی جمہوریت خطرے میں پڑ سکتی ہے پیسے کے ذریعے یا طاقت کے ذریعے۔

کوئ شخص یا گروہ پیسے کے ذریعے ان کی اسمبلی کے ارکان کو خرید سکتا ہے اور یوں ان کے حقوق کو غصب کر سکتا ہے چنانچہ انھوں نے اپنے اسمبلی کے ارکان کی تعداد اتنی زیادہ کر دی کہ کوئ انھیں خریدنے کا سوچ بھی نہ سکے۔

دوسرے کوئ شحص یا گروہ طاقت کے بل بوتے پر ان کے حقوق غصب کر سکتا ہے۔ ایسے مسائل سے نبٹنے کا یہ حل نکالا گیا کہ اہل ایتھنز جب یہ سمجھتے کہ کوئ شحص ان کے حقوق پامال کر رہا ہے تو وہ ایک مٹی کے برتن کے ایک ٹکڑے پر اس شخص کا نام لکھتے اور اس برتن کو شہر کے بیچ چوک میں رکھہ دیتے اس کا مطلب یہ ہوتا کہ وہ شخص دس سال کے لیۓ ایتھنز کی جمھوریہ سے باہر ہے۔ اپنے حقوق کے معاملے میں ایتھنز کے لوگوں نے اپنے ہیرو پیریکلس کو بھی نہ بخشا۔ مٹی کے اس برتن کو یونانی زبان میں اوسٹریکا کہتے ہیں۔ اوسٹریکا سے انگریزی زبان میں دو الفاظ (Ostracise), (Ostracism) آۓ ہیں۔