بال

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

بال ممالیہ جانوروں کی کھال پر اگتے ہیں۔ وہ بال جو انسان کے علاوہ دوسرے ممالیہ جانوروں کے جسم پر اگتے ہیں انھیں “فر“ کہا جاتا ہے، بھیڑ کے جسم پر انھیں گول بالوں کو اون کہا جاتا ہے۔ کسی بھی جسم پر اگر بال موجود نہ ہوں تو اسے “گنجا پن“ کہا جاتا ہے۔ انسانوں اور چند دوسرے جانوروں میں ارتقاء کی وجہ سے بالوں کی بڑی مقدار اب جسم پر موجود نہیں ہوتی اور کچھ ممالیہ جانور جیسے ہاتھی وغیرہ کے جسم پر سے یہ بال مکمل طور پر غائب ہو چکے ہیں۔

اغلاط بال[ترمیم]

کئی غیر ممالیہ جانور جیسے کئی کیڑے اور مکڑی وغیرہ کے اجسام پر بھی بال نما اجسام موجود ہوتے ہیں ان کو حیاتیاتی زبان میں اصل بال تو نہیں گردانا جاتا۔ انھیں Bristleکہا جاتا ہے۔ اسی طرح کئی پودوں کی چھال پر بھی بال نما اجسام موجود ہوتے ہیں، یہ بھی اصل بال نہیں ہوتے بلکہ انھیں Trichomes کہا جاتا ہے۔

بالوں کا مقصد[ترمیم]

ببر شیر کے جسم پر موجود بالوں کی وجہ سے نر زیادہ بڑا اور ہیبت ناک نظر آتا ہے

کسی بھی زندہ جسم پر بالوں کے کئی مقاصد ہو سکتے ہیں، جیسے کہ:

  • یہ جلد کے خلیوں کو روشنی سے بچاتے ہیں اور اس طرح فضا میں موجود حرارت اور نقصان دہ شعاعوں سے جسم محفوظ رہتا ہے۔
  • یہ جلد کو ٹھنڈا ہونے سے بچاتے ہیں اور اس طرح جسم کی حرارت کو محفوظ رکھتے ہیں۔
  • کئی جانور جو کہ ایسے جنگلات میں رہتے ہیں جہاں بارشیں بہت زیادہ ہوں، وہاں جسم پر موجود بال بارش سے بچاؤ کا کام بھی دیتے ہیں۔
  • بالوں کی بنیاد میں پسینہ پیدا کرنے والے غدود ہوتے ہیں۔ ان کی مدد سے جسمانی درجہ حرارت کو برابر رکھا جاتا ہے اور اضافی نمی کو جذب کیا جاسکتا ہے۔
  • کئی جانور بالوں کی مدد سے دوسرے شکاری جانوروں سے بچاؤ کا کام بھی لیتے ہیں۔

انسانی بال[ترمیم]

ایک شخص کے سر، منہ اور جسم پر بال

انسانی جسم میں بال سر پر بہت زیادہ ہوتے ہیں۔ سر کے بالوں کی تعداد مختلف نسلوں میں کم یا زیادہ ہوتی ہے۔ ایشیائی اور شمالی امریکہ کے باشندوں کے جسم پر بالوں کی تعداد بہت کم ہوتی ہے۔

تاریخ اور نسل انسانی میں بالوں کی اہمیت[ترمیم]

انسان سر کے بالوں بارے نہایت دلچسپی رکھتا ہے۔ یہ خود کو سنوارنے کے لیے مرد وخواتین میں یکساں اہمیت رکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ بالوں کو رنگنا، مختلف انداز سے ڈھالنا اور کئی طرح سے سنوارنے کا رواج رہا ہے۔ بعض مذاہب میں جسم کے بالوں کے کاٹنے پر پابندی بھی ہے۔ اور کئی دوسرے معاشرے جسمانی بالوں کو پسند نہیں کرتے۔

‘‘http://ur.wikipedia.org/w/index.php?title=بال&oldid=728599’’ مستعادہ منجانب