بالاکوٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش



بالاکوٹ
Balakot
عمومی معلومات
ملک Flag of Pakistan.svg پاکستان
صوبہ شمال مغربی سرحدی صوبہ
ضلع مانسہرہ
بلندی -971 میٹر از سطحِ سمندر
منطقۂ وقت پاکستان کا معیاری وقت +5
موجودہ ناظم جنید قاسم شاہ


صوبہ خیبر پختونخوا، پاکستان کے ضلع مانسہرہ کا ایک شہر جس کو تحصیل کا درجہ بھی حاصل ہے۔ تاریخی و سیاحتی اہمیت کا حامل ہے۔ سطح سمندر سے اس کی اوسط بلندی 971 میٹر (3188 فٹ) ہے۔ 2005ء میں آنے والے زلزلے سے اس شہر کو تباہ کر کے رکھ دیا۔ زلزلے کی تباہی کے آثار اب بھی جا بجا دکھائی دیتے ہیں۔ حکومت نے اس شہر کو تعمیرات کے لیے غیر موزوں اور خطرناک قرار دے رکھا ہے اور شہر سے چند کلومیٹر باہر "نیو بالاکوٹ سٹی" کے نام سے نیا شہر بسانے کا منصوبہ ہے جس پر کام کا آغاز ہو چکا ہے۔

بالاکوٹ مانسہرہ شہر سے 38 کلومیٹر شمال مشرق میں واقع ہے۔ یہ تاریخی قصبہ سیاحوں کے لیے خاص اہمیت کا حامل ہے کیونکہ وادی کاغان کا آغاز اسی قصبے سے ہوتا ہے۔ جھیل لولوسر سے نکلنے والا دریائے کنہار بالاکوٹ شہر کے قلب سے گزرتا ہوا مظفر آباد کے قریب دریائے جہلم میں جا گرتا ہے۔ یہ ضلع مانسہرہ کا ایک اہم شہر ہے اور اسے سب سے بڑی تحصیل کا درجہ بھی حاصل ہے۔

زلزلے سے چند ماہ قبل کے بالاکوٹ شہر کا ایک منظر

بالاکوٹ کو سید احمد شہید اور شاہ اسماعیل شہید کی تحریک مجاہدین کے باعث تاریخی اہمیت حاصل ہے۔ دونوں عظیم ہستیوں کے مزارات اسی شہر میں واقع ہیں۔ بالاکوٹ تحریک مجاہدین کا آخری پڑاؤ تھا اور سکھوں کے خلاف عظیم جدوجہد کا آخری مرکز۔ 6 مئی 1831ء کو ایک خونریز جنگ کے بعد سید احمد اور شاہ اسماعیل نے بالاکوٹ کی اسی سرزمین کو اپنے لہو سے سرخ کیا۔ شہر کی مرکزی مسجد سید احمد شہید کے مزار سے ملحق دریائے کنہار کے کنارے واقع ہے اور سید احمد شہید مسجد کہلاتی ہے۔ 2005ء کے زلزلے میں تباہ ہونے کے بعد اب اس کی جگہ نئی مسجد تعمیر کی جا رہی ہے۔ یہ مسجد 1992ء کے سیلاب میں بھی تباہ ہوئی تھی۔


بالاکوٹ میں ہندکو زبان سب سے زیادہ بولی جاتی ہے جبکہ اردو زبان زد خاص و عام ہے۔ شہر زلزلے کے بعد سے اب تک ہونے والی امدادی سرگرمیوں کا مرکز ہے کیونکہ زلزلے سے بالاکوٹ اور اس کے گرد و نواح میں زبردست نقصان پہنچایا تھا۔ غیر ملکی امدادی ادارے اور کئی ملکی ادارے زلزلے کے بعد ابتدائی ایام میں ہنگامی خدمات انجام دینے کے بعد زلزلہ زدگان کا ساتھ چھوڑ گئے جبکہ فلاح انسانیت فائونڈیشن اورالخدمت ویلفیئر فاؤنڈیشن جیسے ادارے آج بھی عملی طور پر بالاکوٹ کے عوام کی زندگیوں کو دوبارہ اُسی شاہراہ پر رواں کرنے کے لیے تگ و دو کر رہے ہیں۔ الخدمت کا دفتر بالاکوٹ سے ڈیڑھ کلومیٹر پہلے بانپھوڑا میں واقع ہے۔