بلوصر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
سنگصربلوصربورین
-

Be

Mg
اظہار
white-gray metallic
عمومی خصوصیات
نام ، علامت ، عدد بلوصر ، Be ، 4
عنصری زمرہ alkaline earth metal
گروہ ، دور ، احصار 22 s
معیاری جوہری کمیت 9.012182(3)گ/مول
برقی تشکیل 1s2 2s2
برقات فی خول 2, 2 (Image)
طبعی خصوصیات
حالت ٹھوس
کثافت (قریباً د ح ک) 1.85 گ/سم3
مائع کثافت (ن پ پر) 1.690 گ/سم3
نقطۂ پگھلاؤ 1560 ک، 1287 °س، 2349 °ف
نقطہ کھولاؤ 2742 ک، 2469 °س، 4476 °ف
حرارت ائتلاف 12.2 کلوجول/مول
حرارت تبخیر 297 کلوجول/مول
حرارت اضافی (25 °س) 16.443 جول/(مول.کیلون)
بخاری دباؤ
P/Pa 1 10 100 1 k 10 k 100 k
at T/K 1462 1608 1791 2023 2327 2742
جوہری خصوصیات
تکسیدی حالتیں 2, 1[1]
(amphoteric oxide)
برقی منفیت 1.57 (Pauling scale)
آئنسازی توانائیاں
(مزید)
پہلی: 899.5 کلوجول/مول
دوسری: 1757.1 کلوجول/مول
تیسری: 14848.7 کلوجول/مول
جوہری رداس 105[2] پیکومیٹر
Atomic radius (calc.) 112 [3] پیکومیٹر
کوویلینٹ رداس 96±3 پیکومیٹر
وانڈروال رداس 153 پیکومیٹر
متفرق
قلمی ساخت hexagonal
مقناطیسی ترتیب diamagnetic
برقی مزاحمیت (20 °C) 36 nΩ·m
حر ایصالیت (300 ک) 200 واٹ/(میٹر.کیلون)
حرارتی پھیلاؤ (25 °C) 11.3 µm·m−1·K−1
آواز کی رفتار
(باریک سلاخ))
((قریباً کمرہ حردرجہ) 12870[4] میٹر/سیکنڈ
یانگ مطبقی 287 GPa
قص مطبقی 132 GPa
جثہ مطبقی 130 GPa
پوئیسن نسبت 0.032
موس سختی 5.5
ویکرز سختی 1670 MPa
برینل سختی 600 MPa
کاس عدد 7440-41-7
مستحکم ہمجاء
اصل مقالہ: بلوصر کے ہمجاء
iso NA half-life DM DE (MeV) DP
7Be trace 53.12 d ε 0.862 7Li
γ 0.477 -
9Be 100% 5 تعدیلوں کیساتھ Be مستحکم ہے
10Be trace 1.36×106 y β 0.556 10B

بلوصر (beryllium) ایک کیمیائی عنصر کا نام ہے جو اپنی علامت (انگریزی نظام میں) Be رکھتا ہے اور اس کا جوہری عدد 4 تسلیم کیا جاتا ہے۔

وجۂ تسمیہ[ترمیم]

اس کا انگریزی نام اصل میں beryl نامی ایک سنگ جواہر سے ماخوذ کیا جاتا ہے جو کہ اپنی رنگت میں شفاف (بے رنگ) اور چمکدار ہوتا ہے ؛ beryl کا لفظ بذات خود پراکرت سے یونانی میں (beryllos) اور پھر لاطینی (beryllus) و فرانسیسی سے ہوتا ہوا انگریزی میں آیا ہے۔ اس کے پراکرت مآخذ کے بارے میں ایک نظریہ یہ بھی بیان کیا جاتا ہے کہ شاید یہ ہندوستان کے شہر بلور سے آیا ہو۔۔ اس کے علاوہ یہ بھی ممکن ہے کہ اس کی اساس عربی ہی ہو اور وہاں سے پراکرت میں داخل ہوا ہو کیونکہ اس قسم کے پتھر (یعنی beryl کو) عربی میں بلور کہا جاتا ہے اور عربی ہی سے یہ اردو زبان میں آیا ہے۔ بہرحال اصل ماخذ پراکرت ہو یا عربی دونوں میں اس کا اردو تلفظ بلور ہی بنتا ہے اور اسی سے بلو کے ساتھ عنصر کا لاحقہ صر (ium) لگا کر اس کا اردو متبادل اختیار کیا جاتا ہے۔


حوالہ جات[ترمیم]