بیرم خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
بیرم خان

ترک نسل کا ایک سردار ۔ بخارا کا باشندہ تھا۔ پہلے بابر اور پھر ہمایوں کا مصاحب اور سپہ سالار مقرر ہوا۔ ہمایوں کی جلاوطنی میں اس کے ساتھ ایران گیا۔ کابل فتح کے بعد اکبر اعظم کا اتالیق مقرر ہوا اور اکبر کو تخت نشین کرکے خود اس کا سرپرست بنا۔ اپنے چار سالہ دور حکومت میں پنجاب، اجمیر ، گوالیار ، اور جون پور کے علاقے فتح کرکے سلطنت دہلی میں شامل کیے اور سرکش سرداروں کو مطیع کیا۔ 1560ء میں اٹھارہ برس کی عمر میں ، اکبر نے عنان حکومت سنبھالی اور بیرم کو مکے چلے جانے کا مشورہ دیا۔ لیکن اس نے پنجاب میں بغاوت کردی اور شکست کھائی۔ اکبر نےاس کی پچھلی کارگزاریوں کا لحاظ کرتے ہوئے۔ معاف کردیا اور وہ مکے کو روانہ ہو گئے۔ لیکن گجرات میں پٹن کے مقام پر کسی پٹھان نے ذاتی دشمنی کی بنا پر 1561ء قتل کردیا۔