بین الا قوامی خط تاریخ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

بین الا قوامی خطِ تاریخ (international date line) ایک فرضی خط (لکیر) ہے جو سطحِ زمین پر شمال سے جنوب تک نصف النہار اولیٰ (prime meridian) کے مخالف جانب واقع ہے اور ایک ہی وقت میں اسکے دونوں طرف دو مختلف تاریخیں ہوتی ہیں۔یعنی مغربی حصے کی تاریخ مشرقی حصے کی تاریخ سے ایک دن آگے ہوتی ہے۔

180° درجہ کے طول البلد پر واقع بین الا قوامی خط تاریخ

بین الا قوامی خطِ تاریخ جاپان کے مشرق میں بحرالکاہل کے تقریباً وسط سے گزرتا ہے اور لگ بھگ 180 ڈگری کے طول البلد پر واقع ہے لیکن نہ تو یہ بالکل سیدھا ہے اور نہ ہی اپنی اصل جگہ پر واقع ہے، کیونکہ بحرالکاہل میں کئی چھوٹے بڑے جزیرے ہیں اور اس خط کو کچھ مشرق یا مغرب کی طرف خم دے کر پورے جزیرے کو خط کے ایک طرف کر دیا گیا یے ورنہ ایک ہی جزیرے پر ایک ہی دن میں بیک وقت دو تاریخیں ہو جاتیں۔

دوران سفر اسے عبور کرنے سے تاریخ میں ایک دن کا فرق آ جاتا ہے۔ اگر کوئی پانچ تاریخ کو بدھ کے دن اس خط پر مغرب سے مشرق کی طرف گزرے تو وہ اپنی گھڑی 24 گھنٹے یعنی پورا ایک دن پیچھے کر لیتا ہے اور اس طرح وہ دوبارہ منگل کے دن میں داخل ہو جاتا ہے اور تاریخ بھی ایک دن پیچھے چلی جاتی ہے یعنی پانچ سے چار ہو جاتی ہے۔
اس کے برعکس اگر کوئی پانچ تاریخ کو بدھ کے دن اس خط پر مشرق سے مغرب کی طرف گزرے تو وہ اپنی گھڑی 24 گھنٹے یعنی پورا ایک دن آگے کر لیتا ہے اور اس طرح وہ جمعرات کے دن میں داخل ہو جاتا ہے اور تاریخ بھی ایک دن بڑھ جاتی ہے یعنی پانچ سے چھ ہو جاتی ہے۔

مزید دیکھیئے[ترمیم]