تارا سنگھ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

سکھوں کا مشہور لیڈر تھا۔ شرومنی اکالی دل کا صدر بھی تھا۔ ضلع راولپنڈی میں سکول ماسٹر تھا۔ آہستہ آہستہ اکالی پارٹی کا سر کردہ بن گیا۔ 1947 میں تقسیم ہند کے موقع پر امرتسر چلا گیا۔ قائد اعظم محمد علی جناح نے ایک دفعہ آزاد سکھ اسٹیٹ بنانے کا مشورہ دیا تھا۔ پہلے تو تارا سنگھ کے ذہن میں یہ بات نہ سمائی لیکن بعد میں آزاد صوبی بنانے کا حامی ہوگیا۔ اور آئے دن اس کوشش میں لگا رہا۔ لیکن بھارتی حکومت ایسی کوششوں کو ٹھکراتی رہی۔

سکھوں میں پھوٹ پیدا ہوجانے کی وجہ سے اس کی تحریک کامیاب نہ ہوسکی۔

سکھ ریاست کے قیام کے لیے جدوجہد جاری رکھی لیکن کامیاب نہ ہو سکا۔ آخر کار 1967 میں وفات پا گیا۔