توما

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
توما
Eastern icon of Thomas
حواری, مبلغ, مسیحی شہید
تاریخ پیدائش پہلی صدی عیسوی
گلیل, یہودیہ, سلطلنت روم
تاریخ وفات 21 دسمبر، 72 عیسوی[1]
مالے پورے (انڈیا)[2][3]
قابل احترام Assyrian Church of the East
رومن کیتھولک
راسخُ الا عتقاد کلیسا
Oriental Orthodox Churches
Anglican Communion
لوتھریت
Respected among some Protestant Churches
تعظيم و تکريم Pre-Congregation
ضیافت 3 July - Latin Catholic,[4] Syriac Catholic, Syro-Malabar, Syriac Orthodox
21 December - Indian Orthodox, Anglican Communion
26 Pashons - Coptic Orthodox
6 October and Sunday after Easter Thomas Sunday - Eastern Orthodox
خصوصیات The Twin, placing his finger in the side of Christ, spear (means of martyrdom), square (his profession, a builder)
سرپرستی انڈیا, Saint Thomas Christians, Architects, دہریت converts

حضرت عیسی علیہ السلام کا ایک حواری، آرامی زبان میں توما کو توام کہتے ہیں جس کا مطلب ہے "جڑواں۔ [5]

بائیبل میں توما کا ذکر[ترمیم]

عہد نامہ جدید میں توما کا ذکر چاورں اناجیل اور رسولوں کے اعمال میں ملتا ہے لیکن صرف ایک یا دو بار، البتہیوحنا کی انجیل میں 6 مرتبہ ذکر آیا ہے ملتا ہے۔

  • جب لعزر کی موت پر باقی شاگردوں نے مسیحی کو بیت عنیاہ جانے سے اس لئے روکا کہ یہودی ان کو سنگسار نہ کر دیں توتوما نے کہا تھا آو ہم بھی اس کے ساتھ چلیں تا کہ اس کے ساتھ مریں۔
  • ایک مقام پر یوحنا ہی میں ہے کا جہاں میں جاتا ہوں تم وہاں کی راہ جانتے ہو۔ اس پر توما نے جواب دیا تھا کہ ۔۔۔۔ہم نہیں جانتے کہ تو کہاں جاتا ہے، پھر راہ کس طرح جانیں؟۔[6]
  • پھر جب واقع صلیب کے بعد (مسیحی عقیدے کے مطابق)، جب باقی حواریوں نے مسیح کو زندہ دیکھا، اور توما کو بتایا تو توما نے شک کیا کہ میں نہیں مانتا، خود دیکھوں تو مانو۔[7]

تاریخی روایات کے مطابق توما حواری ہندستان آیا، یہاں پر تبلیع کی ، کچھ لوگوں نے اس کو اس کی پاداش میں اس کو قتل کر دیا۔

توما کی انجیل[ترمیم]

ناگ حمدی سے ملنے والے مسودات میں سب سے بڑا جو مسورہ تھا وہ توما کی انجیل ہی تھی، اس سے بھی پہلے 1897 میں کچھ مسودات ملے تھے ان میں توما کی انجیل کی طرف اشارے پہئے گئے تھے۔ اس میں حضرت یسوع مسیح کی طرف منسوب 114 اقوال و ارشادات ہیں۔[8]

توما سے منسوب کتابیں[ترمیم]

توماکی انجیل کے علاوہ بھی کچھ کتب توما سے منسوب کی جاتی ہیں، لیکن توما کی کوئی بھی کتاب عہد نامہ جدید میں شامل نہیں لیکن کچھ مسیحی گروہ اس کی کتب کو الہامی مانتے ہیں۔

  • توما کی انجیل
  • توما کے اعمال، یا اعمال توما
  • انجیل طفولیت مسیح
  • کتاب مسافرت توما
  • مشاہدات توما۔[9]


مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ Fr. G. Thalian. "`Saint Thomas the Apostle' in `The Great Archbishop Mar Augustine Kandathil, D. D.: the Outline of a Vocation'". D. C. Kandathil. http://web.archive.org/web/20120606161624/http://cs.nyu.edu/kandathi/thomas.html. Retrieved 2010-04-26.
  2. ^ The Encyclopedia of Christianity, Volume 5 by Erwin Fahlbusch. Wm. B. Eerdmans Publishing - 2008, Page 285. ISBN 978-0-8028-2417-2.
  3. ^ http://www.britannica.com/EBchecked/topic/592851/Saint-Thomas
  4. ^ خطا در حوالہ: غلط <ref> ٹیگ؛ حوالہ بنام latin_mass_soc کے لیے کوئی متن فراہم نہیں کیا گیا
  5. ^ قاموس الکتاب، صفحہ 269
  6. ^ یوحنا کی انجیل، 16:11
  7. ^ یوحنا کی انجیل 20:25
  8. ^ قاموس الکتاب، صفحہ 269
  9. ^ آکسی ہومو، مطبوعہ لندن 1813