ثنااللہ حق

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

ثنااللہ الحق پاکستان سے تعلق رکھنے والا شخص جسے بھارت میں جموں کشمیر کی آزادی کے لیے سرگرمیوں پر بھارتی فوجی عدالت نے قید کی سزا سنائی۔ سزا سنانے والے فوجی کا خود کورٹ مارشل ہو چکا ہے۔ جموں کشمیر میں بھارتی قید میں پاکستانی ثنااللہ حق کو ہتھوڑا مار کر شدید زخمی کر دیا گیا اور طبیبوں کے مطابق اس کی ذہنی موت واقع ہو چکی ہے۔[1] خیال کیا جاتا ہے کہ ثنااللہ کو پاکستان میں قید بھارتی جاسوس سربجیت سنگھ کی دوسرے قیدی کے حملے میں موت پر جوابی کاروائی کے طور پر حملہ کا نشانہ بنایا گیا۔ کئی دن ہسپتال میں بیہوش رہنے کے بعد 8 مئی 2013ء کو 52 سال کی عمر میں وفات پا گیا۔[2] سیالکوٹ میں قومی اعزاز کے ساتھ دفنایا گیا۔ پاکستانی حکومت نے اس واقعہ پر بھارت سے احتجاج کیا اور تحقیقات کا مطالبہ کیا۔[3]