جیو نیوز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
جیو نیوز
Geo News
Geo news.jpg
آغاز 2002
جالکار جیو ٹی وی
ملکیت جیو ٹی وی
تصویری شکلبندی 4:3 (576i, SDTV)
شعار جیو اور جینے دو
ملک پاکستان
موقع حبالہ www.geo.tv
دستیابی
مصنوعی سیارہ
ورلڈ ٹی وی یورپ (یورپ) چینل 13
پہلا (مشرق وسطی)
سکائی ڈیجیٹل (برطانیہ / آئر لینڈ) چینل 825
ڈش نیٹ ورک(امریکہ) چینل 902
انڈووژن(انڈونیشیا)
کیبل
سدرن نیٹ ورکس (پاکستان) چینل 9
یونائیٹڈ کمیونیکیشن سروسز چینل 52
کیبل لنک (فلپائن) چینل 109
آئی پی ٹی وی
ورلڈ آن ڈیمانڈ (جاپان) چینل 116
پی ٹی سی ایل سمارٹ ٹی وی (پاکستان) چینل 08
Freebox TV (فرانس) چینل 602
NeufBox TV (فرانس) چینل 630
ٹی وی دیسی (کینیڈا) چینل ??
انٹرنیٹ ٹیلی ویژن
جیو نیوز لائیو براہ راست دیکھیں

جیو نیوز پاکستان کا خبروں کا چینل ہے جو کہ 2005 کو شروع ہوا۔ جیو جنگ گروہ کی ملکیت ہے جس کا سربراہ میر شکیل الرحمن ہے۔

اہم پروگرام[ترمیم]

اس نیٹ ورک کے زیرنگرانی دوسرے ٹی وی چینل مندرجہ ذیل ہیں۔

جیو نیوز چینل کی ایک خوبی یہ ہے کہ اس چینل کی بنیادی پالیسی ہر خبر کو سب سے پہلے نشر کرناہے۔ اس مقصد کے لئے جیو کا فرض شناس عملہ ہر جکہ نظر آتا ہے۔ ہر واقعے کی سی سی فوٹیج خفیہ ہاتوں سے سب سے پہلے جیو کو ہی موصول ہوتی ہیں۔

غیر ملکی پیسہ[ترمیم]

  • اوبامہ نے پاکستان ذرائع ابلاغ پر امریکیوں کو اچھی روشنی میں دکھانے کے لیے پچاس ملین ڈالر کی رقم ادا کی۔[1][2]
  • برطانوی حکومت نے پاکستان میں تدریس کی "اصلاح" کے لیے نجی پاکستانی ابلاغ کو 20 ملین پاؤنڈ فراہم کیے۔

حامد میر تنازعہ[ترمیم]

19 اپریل 2014 کو حامد میر پر حملے کے بعد جیو نیوز نے آئی ایس آئی کے سربراہ پر حملے کا الزام لگایا[3] اور مسلسل آٹھ گھنٹے تک اسے نشر کیا۔ جس کے بعد مختلف شہروں میں ہنگامے شہروع ہو گئے۔ پمرا کی ہدایات پر جیو نیوز کو کئی شہروں میں بند کر دیا گیا اور کئی میں اس کا نمبر پیچھے کر دیا گیا۔ 21 مئی میں پیمرا کے اجلاس میں اس بات کا فیصلہ کیا گیا کہ جیو کا لائسنس معطل کر دیا جائے۔جس کے بعد جیو نیوز، جیو تیز اور جیو اینٹرٹینمنٹ کے نشریات روک دی گئیں۔ [4]

مزید[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]