دریائے دجلہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
دریائے دجلہ
دریا
دجلہ اس کے منبع سے ایک سو کلومیٹر دیار بکر ، ترکی تک کاشکاری کے لئے زرخیز کرتی ہے
ممالک ترکی, شام, عراق
معاون ندیاں
 - بائیں دریائے بطمان, دریائے گرزان, دریائے بوطان, خابور, زاب کبریٰ, زاب صغریٰ, 'Adhaim
 - دائیں وادئ ثرثار
شہر دیار بکر, موصل, بغداد
ماخذ جهیل ہزار
 - بلندی
 - متناسقات 38°29′0″N 39°25′0″E / 38.48333°N 39.41667°E / 38.48333; 39.41667
دہانہ شط العرب
 - محل وقوع قرنہ, صوبہ بصرہ, عراق
لمبائی 1,850 کلومیٹر (1,150 میل)
طاس 375,000 کلومیٹر2 (144,788 مربع میل)
نکاس for بغداد
 - اوسط 1,014 m3/s (35,809 cu ft/s)
 - ریادہ سے ریادہ 2,779 m3/s (98,139 cu ft/s)
 - کم سے کم 337 m3/s (11,901 cu ft/s)
دجلہ و فرات طاس علاقہ
دجلہ و فرات طاس علاقہ
[1][2]



دجلہ عراق کے شہر موصل میں

دجلہ (Tigris) عراق کا ایک دریا جو کردستان کی پہاڑیوں سے نکل کر عراق کے میدان کو سیراب کرتا ہوا دریائے فرات کے ساتھ آملتا ہے۔ ان دونوں دریاؤں کے مجموعی دھارے کوشط العرب کہتے ہیں۔ یہ دریا بغداد تک ’’یعنی 50 میل‘‘ جہاز رانی کے قابل ہے۔ اس کے کنارے نینوا اور دیگر قدیم شہروں کے آثار پائے جاتے ہیں۔ اور قط العمارہ ، بغداد ،سامرا اور موصل کے شہر آباد ہیں۔ دریا میں تقریبا ہر سال طغیانی آ جاتی ہے جس سے گرد و نواح کا علاقہ سیراب ہوتا ہے۔ اور یہاں کی زرخیزی اسی دریا کی بدولت ہے۔

بیرون موصل ، عراق

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ Isaev, V.A.; Mikhailova, M.V. (2009). "The hydrology, evolution, and hydrological regime of the mouth area of the Shatt al-Arab River". Water Resources 36 (4): 380–395. doi:10.1134/S0097807809040022.
  2. ^ Kolars, J.F.; Mitchell, W.A. (1991). The Euphrates River and the Southeast Anatolia Development Project. Carbondale: Southern Illinois University Press. pp. 6–8. ISBN 0-8093-1572-6.