رائبو مرکزی ترشہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
آر این اے اور ڈی این اے کے سالمات میں بنیادی فرق؛ آر این اے کا سالمہ ، یک طاقین (ایک پٹی یا بازو والا) جبکہ ڈی این اے کا سالمہ ، ذوطاقین (دو بازو والا) ہوتا ہے۔ اسکے علاوہ آر این کے سالمے میں تھایامین کی جگہ یوراسل کا قاعدہ ہوتا ہے (سرخ ابجد) ، مزید یہ کہ آر این اے میں ڈی آکسی رائبوز کے بجاۓ رائبوز شکر پائی جاتی ہے

رائبو مرکزی ترشہ (Ribo Nucleic Acid) ، مرکزی ترشہ کی ایک شکل ہے جو کہ چھوٹی اور بنیادی موحود (monomer) اکائیوں سے مل کر بننے والے ایک سالمۂ کبیر (macromolecule) یعنی بڑے سالمہ کی صورت میں خلیات کے اندر پایا جاتا ہے۔ موحود ، واحد سے بنا ہوا لفظ ہے جسکی تفصیل کے لیۓ اسکا صفحہ مخصوص ہے۔ ڈی این اے کی طرح آر این اے بھی ، ایک مکثورہ (polymer) جو کہ بنیادی سالمات جنکو مرکزی ثالثہ (nucleotide) کہاجاتا ہے سے ملکر بنتا ہے۔ DNA اور RNA میں اہم ترین فرق یہ ہوتا ہے کہ آر این اے میں ڈی آکسی رائبوز (ایک شکر) کی جگہ رائبوز اور قاعدہ تھایامن کی جگہ یوراسل پائی جاتی ہے۔

آر این اے اور ڈی این اے میں فرق[ترمیم]

آر این اے اور ڈی این اے دونوں ہی مرکزی ترشوں کی اقسام ہیں۔ آر این اے کو یوں کہ لیں کہ یہ خلیہ کے مرکزے میں ڈی این اے کے ذو طاقین (double stranded) سالمہ کے یک طاقین (single stranded) سالمے میں تقسیم ہونے سے بنتا ہے۔

  • آر این اے میں پائی جانے والی شکر ، رائبوز میں ایک OH گروہ زیادہ ہوتا ہے جبکے ڈی این اے میں میں اسکی جگہ صرف H ہوتا ہے اسی لیۓ اسکو ڈی آکسی رائبوز کہا جاتا ہے (رائبوز سالمات کی شکلی وضاحت کے لیۓ دیکھۓ ، DNA)
  • ایک اور فرق یہ کہ DNA میں تھایامین (T) کی جگہ ایک اور قاعدہ بنام یوراسل (U) پایا جاتا ہے (دیکھیۓ شکل ، لون احمر)۔
  • آر این اے کا سالمہ ، یک طاقین (ایک بازو والا) جبکہ ڈی این اے کا سالمہ ذوطاقین (دو بازو والا) ہوتا ہے۔