راشٹریہ سویم سیوک سنگھ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش


راشٹریہ سوائم سیوک سنگھ یا آر ایس ایس بھارت کی دہشت گرد تنظیم ہے [1]۔ اس کی اشاعت ۱۹۲۵ ء کو ناگپور میں ہوئی۔ اس کا بانی کیشوا بلی رام ہیڑگیوار ہے۔ یہ ہندو سوائم سیوک سنگھ کے نام سے بیرون ممالک میں سرگرم ہے۔ یہ بھارت کو ہندو ملک گردانتا ہے۔ اور یہ اس تنظیم کا اہم مقصد بھی ہے۔ بھارت میں برطانوی حکومت نے ایک بار [2] ۔ اور آزادی کے بعد حکومتِ ہند نے تین بار اس تنظیم کو ممنوع کر دیا۔

فسادات[ترمیم]

بھارت میں دنگے فسادات برپا کرنے میں اس تنظیم کا نام سر فہرت ہے۔ ۱۹۲۷ ء کا ناگپور فساد ان میں اہم اور اول ہے۔ ۱۹۴۸ ء کو اس تنظیم کے ایک رکن ناتھورام ونائک گوڑسے نے مہاتما گاندھی کو قتل کر دیا۔ ۱۹۶۹ء کو احمد آباد فساد ، ۱۹۷۱ ء کو تلشیری فساد اور ۱۹۷۹ ء کو بہار کے جمشید پور فرقہ وارانہ فساد میں ملوث رہی۔ ۶ دسمبر ۱۹۹۲ء کو اس تنظیم کے اراکین (کارسیوک) نے بابری مسجد میں گھس کر اس کو منہدم کر دی۔ آر ایس ایس کو مختلف فرقہ وارانہ فسادات میں ملوث ہونے پر تحقیقی کمیشن کی جانب سے سرزنش کا سامنا کرنا پڑا ، وہ درج ذیل ہیں

  • ۱۹۶۹ ء کے احمدآباد فساد پر جگموہن رپورٹ
  • ۱۹۷۰ ء کے بھیونڈی فساد پر ڈی پی ماڈن رپورٹ
  • ۱۹۷۱ ء کے تلشیری فساد پر وتایاتیل رپورٹ
  • ۱۹۷۹ ء کے جمشیدپور فساد پر جتیندر نارائن رپورٹ
  • ۱۹۸۲ ء کے کنیاکماری فساد پر وینوگوپال رپورٹ
  • ۱۹۸۹ ء کے بھاگلپور فساد کی رپورٹ

ہم خیال تنظیمیں[ترمیم]

  • سنگھ پریوار :

آر ایس ایس کے آدرشوں کے مطابق سرگرم تنظیموں کو عام طور پر سنگھ پریوار کہتے ہیں۔آر ایس ایس کی دوسری ہم خیال تنظیموں میں وشوا ہندو پریشد ، ون بندھو پریشد ، راشٹریہ سیوکا سمیتی ، سیوا بھارتی ، اکھل بھارتی ودیارتھی پریشد ، ونواسی کلیان آشرم ، بھارتی مزدور سنگھ ، ودیا بھارتی وغیرہ شامل ہیں۔

دہشت گردانہ سرگرمیاں[ترمیم]

درجِ ذیل وطن مخالف سرگرمیوں میں سنگھ پریوار تنظیمیں ملوّث ہیں۔

  • مالیگاؤ بم دھماکہ
  • حیدرآباد مکہ مسجد بم دھماکہ
  • اجمیر بم دھماکہ
  • سمجھوتہ ایکسپریس بم دھماکہ

زعفرانی دہشت گردی[ترمیم]

سنگھ پریوار کے زیرِ قیادت بھارت میں ہونے والی دہشت گردانہ سرگرمیوں کو زعفرانی دہشت گردی کا نام دے سکتا ہے [3]۔


حوالہ جات[ترمیم]


بیرونی روابط[ترمیم]

[Encyclopedia of modern worldwide extremists and extremist]