زاہد حسین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

پیدائش: 1895ء

انتقال: 1957ء

پاکستان کے ممتاز ماہر اقتصادیات علی گڑھ کالج اور لاہور میں تعلیم حاصل کی۔ بعدازاں چیف کمشنر کی حیثیت سے فرائض سرانجام دیئے ۔ 1945ء میں حکومت حیدر آباد دکن میں وزیر مالیات مقرر ہوئے۔ تقسیم کے بعد پاکستان چلے آئے اور اگست 1947ء میں ہندوستان میں پاکستان کے پہلے ہائی کمشنر مقرر ہوئے۔ اپریل 1948ء تک اسی عہدے پر فائز رہے۔ اس کے بعد انہیں پاکستان سٹیٹ بنک کا پہلا گورنر مقرر کیاگیا۔ 1953ءمیں حکومت نے انہیں منصوبہ بندی بورڈ کی تشکیل کی تو اس کے صدر مقرر ہوئے دسمبر 1965ء تک اسی عہدے پرمامور ہوئے ۔ انہی کی رہنمائی میں پاکستان کا پہلا پانچ سالہ منصوبہ تیار ہوا جس میں ملکی معیشت کے استحکام کے لیے زرعی اصلاحات کی سفارش کی گئی تھی۔ مگر اس وقت کا مقتدر طبقہ ان اصلاحات کے خلاف تھا اس لیے انہیں منصوبہ بندی بورڈ کی صدارت سے علیحدہ کر دیا گیا۔ بعد ازاں مرتے دم تک محصولات کی تحقیقاتی کمیٹی کے صدر رہے۔