سالماتی خلیاتی وراثیات

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

بنیادی طور پر سالماتی خلیاتی وراثیات اصل میں خلیاتی وراثیات کی ایک شاخ ہے اور خلیاتی وراثیات بذات خود وراثیات کی ایک شاخ ہے۔

سالماتی خلیاتی وراثیات کو انگریزی میں molecular cyto-genetics کہتے ہیں اور جیسا کہ نام سے ظاہر ہے کہ یہ ایسی خلیاتی وراثیات ہے کہ جس میں سالمات یعنی molecules کے پیمانے پر مطالعہ کیا جاتا ہے یا یوں کہ لیں کہ سالماتی حیاتیات کی مدد لی جاتی ہے۔ اسی بات کو مزید سادہ انداز میں یوں بھی کہا جاسکتا ہے کہ سالماتی خلیاتی حیاتیات اصل میں سالماتی حیاتیات اور خلیاتی حیاتیات کے ملاپ سے وجود میں آتی ہے۔

اس علم میں یوں تو تمام سالماتی حیاتیات کے طریقہ کاروں کو استعمال کیا جاتا ہے۔ ان میں سے دو طریقہ کار انتہائی اہم ہیں

  1. لونی جسیمات کو چمکا کر دیکھنا (Fluorescence in-situ hybridization) اسے مختصرا FISH بھی کہا جاتا ہے
  2. ڈی این اے کی نقول گننا (Comparative genomic hybridization) اسے مختصرا CGH بھی کہا جاتا ہے

بیرونی روابط[ترمیم]

  1. خلیاتی وراثیات کے بارے میں متعدد روابط
  2. خلیاتی وراثیات کے چند انتہائی بنیادی اور اہم نظریات
  3. انجمن طرازگران وراثیات
  4. انجمن طرازگران سریری خلیاتی وراثیات
  5. ایک طبی نوشتۂ جال (بلاگ)