سباتائی زیوی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
1665 میں سباتائی زیوی

سباتائی زیوی نے عہد عثمانی میں یہود کے ایک فرقہ ڈون مے سباتائین (Sabbateans)کی ابتداءکی ۔ یہودیوں میں ایک عقیدہ تھا کہ ایک یہودی مسیحا آ کر ان کو غلامی سے نجات دے گا۔ سباتائی زیوی نے 1666 میں یہودی مسیح موعود (Promised Messiah) ہونے کا دعویٰ کیا۔ کچھ یہودیوں نے اسے مانا جبکہ ربیوں نے اسے مسترد کر دیا۔ اس وقت کے عثمانی حکمراں سلطان محمد رابع (r. 1648-1687) نے سباتائی کو اپنے دربار میں بلوایا جان بچانے کے لیے معجزہ دکھانے کو کہا تو سباتائی نے اسلام قبول کر لیا۔ اسلام قبول کرنے کی وجہ سے اس کے بہت سے مرید اسے چھوڑ گئے۔ اس کے بعد یہ سلطان کی ہی خدمت میں رہے اور کئی علمی کتابوں کے ترجمے کیے۔انہوں نے یہودی تصوف قبالہ کو اپنے مریدوں میں متعارف کرایا تھا۔ ان کے ماننے والے آج بھی ترکی میں پائے جاتے ہیں ۔