شاہد مسعود

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

ڈاکٹرشاہد مسعود ایک عالمی شہرت یافتہ صحافی ،محقق، تجزیہ کار ہیں۔

  • زمانہ طالب علمی میں پیپلز پارٹی کی طلبہ تنظیم پی ایس ایف یعنی پیپلز اسٹوڈنٹ فیدرشین سے تعلق رہا۔ سندھ میڈیکل کالج میں بھی اسی گروپ سے منسلک رہے۔
  • 1999 میں نواز شریف کی حکومت کے خاتمہ کے بعد خود ساختہ جلاوطنی اختیار کی اور برطانیہ میں سیاسی پناہ گزین کی حیثیت سے آئے۔
  • 2001 میں اے آر وائی ٹی نیٹ ورٹ میں مہمان کی حیثیت سےعامر غوری کے شو میں آنا جانا شروع کیا۔ اس دوران عامر غوری کی بی بی سی لندن میں شامل ہونے کے بعد پروگرام کے میزبان بن گئے۔
  • سیاسی پناہ کے دوران حکومت پاکستان پر بھرپور اور کھل کر تنقید ان کی وجہ شہرت بنی۔ [1]

http://www.youtube.com/watch?v=271iEYoCMo0

وجہ شہرت[ترمیم]

آپ کی شہرت اس وقت نصف انہار پر پہنچی جب آپ نے اپنی مشہور زمانہ ڈاکیومینٹری اینڈ آف دی ‌ٹائم ریلیز کی۔ یہ پروگرام دراصل ترکی کے معروف سکالر ہارون یحیٰ کا تھا جس کا ترجمہ کرکے ڈاکٹر صاحب نے اپنے نام سے جاری کردیا۔ اگرچہ تبلیغ اور اشاعت اسلام کے مقاصد کے تحت ہارون یحیحیٰ نے سب کو اس کی اجازت دے رکھی ہے مگر شاہد صاحب نے بددیانتی کا مظاہرہ کرتے ہوئے ان کا نام ظاہر نہیں کیا اور یہ تاثر دیا کہ وہ سارا کام ان اپنا کیا ہوا ہے۔

مینجنگ ڈائریکٹر پاکستان ٹیلی وژن[ترمیم]

آپ کچھ عرصہ پی ٹی وی کے مینجنگ ڈائریکٹر بھی رہے لیکن جلد ہی اپنی پیشہ ورانہ مصروفیات کے باعث استعفی دے دیا۔

جنرل مشرف کی پرکشش پیشکش پر جیو ٹی وی کو چھوڑ کر پی ٹی وی سے بھاری تنخواہ اور مراعات کے ساتھ منسلک ہوگئے۔ سینٹ آف پاکستان میں ایک سوال کے جواب میں بتایا گیا کہ ان کی تنخواہ اور مراعات 7 لاکھ روپیہ ماہانہ ہے۔ [2] جس پر بہت شور مچا۔ اپنی تعیناتی کے بعد انہوں نے زمزمہ ڈیفنس میں اس وقت کے صدر جنرل پرویز مشرف سے ملاقات کی تھی۔ جہاں پر سندھ کے گورنر عشرت العباد نے انہیں کہا تھا کہ کل تک میرے مطابق تھا آج سرکار کے مطابق ہوچکا ہے۔ یعنی کل تک آپ اپنی زبان بولتے تھے آج سرکار کی زبان بول رہے ہیں۔ جب پاکسانی عوام نے اس تنخواہ پر اور بالخصوص بجلی کے بلوں سے شاہد مسعود کی تنخواہ یعنی ٹی وی فیس شامل کرنے پر احتجاج کیا تو موصوف کو استعفیٰ دینا پڑا۔

ان کے مطابق[ترمیم]

منظرہ یوٹیوب پر
خطا در حوالہ: <ref> ٹیگس موجود ہیں، لیکن <references/> ٹیگ موجود نہیں