شمسی ہوائی اڈہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش


شمسی ہوائی اڈا
آئی اے ٹی اے: noneآئی سی اے او:
شمسی is located in پاکستان
شمسی
پاکستان میں ہوائی اڈے کا مقام
خلاصہ
قسم سرکاری
مالک حکومت پاکستان
منتظم حکومت پاکستان (وزارت دفاع پاکستان)
جائے وقوع ضلع واشک, بلوچستان, پاکستان
سطح سمندر سے بلندی 1,115 فٹ / میٹر
متناسقات 27°51′0″N 65°10′0″E / 27.85°N 65.16667°E / 27.85; 65.16667متناسقات: 27°51′0″N 65°10′0″E / 27.85°N 65.16667°E / 27.85; 65.16667
دوڑنے کا راستہ
سمت لمبائی سطح
فٹ میٹر
04R/22L 9,883 3,012 Asphalt

شمشی ہوائی اڈہ پاکستان کے مغربی صوبے بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ سے 320 کلومیٹر دور جنوب مغربی ضلع واشک میں واقع ہے۔ یہ ایئرپورٹ قریبا 30 سال قبل سعودی عرب سمیت دیگر خلیجی ممالک کے حکمرانوں نے تعمیر کرایا تھا اور ہر سال گرمیوں کے موسم میں عرب شیوخ تلور کا شکار کرنے یہاں آیا کرتے تھے۔

2001ء میں افغانستان میں طالبان حکومت کو گرانے اور القاعدہ کے خلاف آپریشن شروع کرنے کے لیے پہلی بار امریکی فوج نے شمسی ایئربیس کا استعمال شروع کیا۔ 2002ء میں شمسی ایئربیس کے قریب ایک امریکی فوجی طیارہ فنی خرابی کے باعث گر کرتباہ ہوا۔ 2001ء سے 2006ء تک امریکی اور ناٹو افواج نے شمسی ائربیس کو باقاعدگی سے افغان طالبان اور القاعدہ کے خلاف استعمال کیا۔ امریکا نے پاکستان کے قبائلی علاقوں میں پاکستانی طالبان کے خلاف ڈرون حملوں کے لیے بھی شمسی ایئربیس کا استعمال کیا۔2009ء میں انکشاف ہوا کہ ڈرون طیارے شمسی ایئربیس سے پرواز کرتے ہیں۔

رواں سال اپریل میں پاکستان اور امریکا نے مشترکہ طور پر اعلان کیا کہ شمسی ائربیس سے ڈرون پروازوں کو بند کردیا گیا ہے۔ 13 مئی 2011ء کو پارلیمنٹ کے ان کیمرہ مشترکہ اجلاس میں عسکری قیادت نے انکشاف کیا کہ شمسی ایئربیس اس وقت پاکستان کے نہیں بلکہ عرب امارات کے کنٹرول میں ہے۔ 26 نومبر 2011ء کو مہمند ایجنسی میں پاکستانی چیک پوسٹ پر ناٹو حملے کے بعد پاکستان نے امریکا کو 15 دن کے اندر شمسی ایئربیس خالی کرنے کا الٹی میٹم دے دیا جس کے بعد امریکا نے اسے خالی کردیا ہے۔