شکیل آفریدی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
Shakeel afridi doctor traitor.jpeg

شکیل آفریدی صوبہ خیبر پختونخواہ میں بحثیت معالج سرکاری ملازم ہے۔ 2011 میں اس نے بطورCIA کارندہ، ایبٹ آباد کے علاقہ میں بقریہ کی مہم چلائی جس کا اصل مقصد اسامہ بن لادن کے خاندان کا ڈی این اے حاصل کرنا تھا۔ جاسوسی کے الزام میں اسے پاکستانی پاسبان نے گرفتار کر لیا۔ امریکہ نے اس کی رہائی کے لیے دباؤ ڈالا۔[1] [2] اکتوبر 2011 میں تحقیقاتی لجنہ نے سفارش کی کہ شکیل پرغداری کا مقدمہ قائم کیا جاوے۔[3] کہا جاتا ہے کہ شکیل آفریدی امریکی کارندہ بننے کے بعد اعلی عہدے پر پہنچا۔[4] مئی 2012ء کو قبائل علاقہ جات کے منتظم نے آفریدی کو غداری کے جُرم میں 30 سال قید کی سزا سنائی۔[5]


حوالہ جات[ترمیم]