شیخ دین محمد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

شیخ دین محمد 1759 میں پٹنہ میں پیدا ہوا جب ایسٹ انڈیا کمپنی ہندوستان پر قبضہ جما رہی تھی۔ اس زمانے میں پٹنہ بنگال کا حصہ تھا اب یہ بہار کا حصہ ہے۔ دین محمد (Dean Mahomet) نے انگریز افواج کے ساتھ جو سفر کیئے اسکا سفرنامہ 1794 میں شائع کیا۔ یہ پہلی کتاب ہے جو کسی ہندوستانی نے انگریزی زبان میں چھپوائی تھی۔

Sake Dean Mahomed by Thomas Mann Baynes (c. 1810)

دین محمد کے باپ دادا ترکی سے تعلق رکھتے تھے اور سترھویں صدی میں ایران کے رستے ہندوستان آئے تھے تاکہ مغل دربار میں اچھی نوکری کر سکیں۔ دین محمد کے زمانے میں مغلوں کی حکومت زوال پذیر ہو چکی تھی۔ اسکے سفر نامے میں شاہ عالم دوّم، الٰہ باد اور دہلی کا بڑی تفصیل سے ذکر ہے۔
دین محمد کا باپ اور بھائی ایسٹ انڈیا کمپنی میں ملازم تھے۔ دین محمد کی عمر صرف گیارہ سال تھی جب اسکے باپ کا انتقال ہو گیا اور اسے گھر چھوڑنا پڑا۔ ایسٹ انڈیا کمپنی کے کیپٹن ایوان بیکر نے دین محمد کو اپنے پاس رکھ لیا۔ دین محمد نے اپنے سفر نامے میں کیپٹن بیکر کو اپنا بہترین دوست قرار دیا۔
1784 میں جب بیکر نے کمپنی کی ملازمت سے استعفا دیا تو دین محمد بھی نوکری چھوڑ کر 25 سال کی عمر میں بیکر کے ساتھ آئر لینڈ چلا گیا تین سال بعد بیکر کا انتقال ہو گیا۔ دین محمد نے آئرش لڑکی سے شادی کرنے کے لیئے اسلام ترک کر کے عیسائیت اختیار کی اور باقی عمر برطانیہ میں گزاری۔ 92 سال کی عمر میں اس کا انتقال ہوا۔

سیاسی دفاتر
پیشرو
شیخ غلام حسین ہدایت اللہ
گورنر سندھ
7 اکتوبر، 1948ء– 19 نومبر 1949ء
جانشین
میاں امین الدین

مزید دیکھیئے[ترمیم]

ایسٹ انڈیا کمپنی

بیرونی ربط[ترمیم]

دین محمد کا سفر نامہ۔ 1794