صفیہ بنت عبد المطلب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

صحابیہ جو حضرت عبدالمطلب کی صاحبزادی اور آنحضرت صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی پھوپھی تھیں۔ آپ آنحضرت کی تمام پھوپھیوں میں واحد پھوپھی تھیں جو مشرف بہ اسلام ہوئیں۔ والدہ کا نام ہالہ بنت وہب جو حضرت آمنہ بنت وہب کی بہن تھیں اس لحاظ سے صفیہ بنت عبد المطلب آنحضرت کی خالہ زاد بہن بھی تھیں نیز آپ سید الشہدا حضرت حمزہ کی حقیقی بہن تھیں۔

ازدواجی حیثیت[ترمیم]

صفیہ بنت عبد المطلب کا پہلا نکاح ابو سفیان بن حرب کے بھائی حارث بن حرب سے ہوا۔ اس کے انتقال کے بعد آپ کا نکاح حضرت خدیجہ کے بھائی عوام بن خویلد سے ہو گیا۔

اولاد[ترمیم]

آپ زبیر ابن العوام کی والدہ تھیں۔

قبول اسلام[ترمیم]

آنحضرت کی بعثت کے ساتھ ہی آپ نے اسلام قبول کر لیا۔

دینی خدمات[ترمیم]

غزوہ احد اور غزرہ خندق میں انہوں نے بڑی بہادری دکھائی۔

ادبی ذوق[ترمیم]

آنحضرت کی رحلت پر انہوں نے بڑا پر اثر مرثیہ کہا۔

وفات و تدفین[ترمیم]

آپ جنت البقیع میں مدفون ہیں۔