ضیا الدین برنی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

پیدائیش: 1285ء وفات: 1357ء

بھارت کے صوبہ اتر پردیش کے مغربی اضلاع میں ایک ضلع بلند شہر ہے۔ اس ضلع کے صدر مقام کا بھی یہی نام ہے۔ لیکن سلاطین دہلی کے زمانے میں یہ شہر برن کے نام سے موسوم تھا۔ اگرچہ اب یہ اہمیت کا حامل شہر نہیں ہے مگر زمانہ قدیم میں اس کو بڑی اہمیت حاصل تھی۔

ہندوستانی مورخ ۔ ابتدائی حالات نامعلوم ۔ قیاس ہے کہ گنگا و جمنا کے دو آبے کاایک قدیم شہر برن (بلندشہر) اس کا مولد تھا۔ اسی نسبت سے برنی کہلایا۔ والد اور چچا سلطنت دہلی کے عمائد سے تھے۔ علاوالدین خلجی کے عہد میں سن شعور میں قدم رکھا۔ سترہ سال سلطان محمد بن تغلق کے دربار سے وابستہ رہا۔ فیروز خان تغلق کے دور میں معتوب ہوا۔ زندگی کے باقی ایام قید و بند میں گزرے۔ مشہور ترین اور لافانی تصنیف ’’ تاریخ فیروز شاہی‘‘ ہے جو آغاز عہد بلبن )1266ء سے سلطان فیروز شاہ کے ابتدائی دور 1358ء تک کی نہایت مستند و معتبر تاریخ مانی جاتی ہے۔ دیگر اہم تصانیف: فتاوی جہاں داری ، نعمت محمدی ، اور اخبار برمکیاں