عربی علم الاساطیر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
Featured article candidate.svg
یہ مضمون منتخب مقالہ بنائے جانے کے لیے امیدوار ہے۔ اس لیے اس مضمون کو خاص توجہ کی ضرورت ہے۔

عربی علم الاساطیر (Arabian mythology) قدیم عرب لوگوں کے عرب قبل از اسلام عقائد ہیں۔ قبل از اسلام مکہ کا کعبہ مشرکیت، دیوتاوں اور بتوں کی پوجا اور دیگر خرافات کا گڑھ تھا۔ قبل از اسلام زیادہ تر معبودوں کا تعلق بتوں سے ملتا ہے خاص طور وہ بت جو کعبہ میں موجود تھے ان کی تعداد تقریبا 360 کے لگ بھگ تھی۔ [1]

معبود[ترمیم]

ہبل معبودوں میں سب سے زیادہ قابل ذکر اور معبودوں کا سردار شمار کیا جاتا تھا۔ کعبہ ہبل کے لیے وقف کر دیا گیا تھا۔ [1] ہبل کا بت کعبہ کے قریب رکھا گیا تھا جو کہ ایک انسانی شکل کا تھا اسکا دائیں ہاتھ ایک سنہری ہاتھ سے تبدیل کر دیا گیا تھا۔ [2]

دیگر اہم معبود[ترمیم]

  • مناف‎ - عورتوں اور حیض سے متعلق دیوتا تھا۔ [3]
  • ود - محبت اور دوستی کا دیوتا تھا۔ سانپ ود کے لیے مقدس خیال کیے جاتے تھے۔ [3]
  • ام - چاند کا دیوتا تھا جس کی پوجا قدیم قتبان لوگ کرتے تھے۔
  • طالب‎ - چاند کا دیوتا تھا گس کی پوجا جنوبی عرب میں خاص طور پر مملکت سبا میں ہوتی تھی۔
  • ذو الحلاس‎ - جنوبی عرب کا ایک الہامی دیوتا تھا۔
  • القوم - انباط کا جنگ اور رات کا دیوتا تھا، اور قافلوں کا محافظ تھا۔
  • ذو شرى - انباط کا دیوتا تھا جس کے معنی "پہاڑوں کا سردار" ہیں۔

فوق الفطرت مخلوقات[ترمیم]

ذو شرى، دمشق قومی عجائب گھر

ارواح[ترمیم]

  • جن‎ - ایک فوق الفطرت آزاد فطرت مخلوق ہے۔
  • عفريت‎ - ایک فوق الفطرت شیطانی جن‎ ہے۔

عفریت / بلا[ترمیم]

  • نسناس - نصف انسان، جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ وہ ڈیمن اور انسان کے ملاپ سے پیدا ہوا۔
  • غول صحرا میں رہنے والی شکل تبدیل کرنے والی بلا ہے۔
  • بهموت‎ - ایک بڑی مچھلی ہے جس نے زمین کو سہارا دیا ہوا ہے،اسکا سر دریائی گھوڑے یا ہاتھی کی مشابہت کے طور پر بیان کیا جاتا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ 1.0 1.1 Karen Armstrong (2000,2002). Islam: A Short History. pp. 11. ISBN 0-8129-6618-X. 
  2. ^ The Book of Idols (Kitāb al-Asnām) by Hishām Ibn al-Kalbī
  3. ^ 3.0 3.1 Book of Idols