لوک سبھا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

لوک سبھا، بھارتی پارلیمان کا ایوان زیریں ہے. بھارتی پارلیمان کا ایوان بالا راجیہ سبھا ہے. لوک سبھا آزادانہ بالغ حق کی بنیاد پر لوگوں کی طرف سے براہ راست انتخابات کے ذریعہ منتخب کئے ہوئے اراکین سے قائم ہوتی ہے. ہندوستانی آئین کے مطابق ایوان میں ارکان کی زیادہ سے زیادہ تعداد 552 تک ہو سکتی ہے، جس میں سے 530 رکن مختلف ریاستوں اور 20 اراکین تک مرکزی وفاقی ریاستوں کی نمائندگی کر سکتے ہیں. ایوان میں کافی نمائندگی نہیں ہونے کی صورت میں بھارت کا صدر اگر چاہے تو بھارتی برادری کے دو نمائندوں کو لوک سبھا کے لئے نامزد کر سکتا ہے.
کل منتخب رکنیتوں کا انتخاب ریاستوں کے درمیان اس طرح سے کیا جاتا ہے کہ ہر ریاست کو نامزد نشستوں کی تعداد اور ریاست کی آبادی کے درمیان ایک عملی تناسب ہو، اور یہ تمام ریاستوں پر لاگو ہوتا ہے. حالانکہ موجودہ پارلیمان میں ریاستوں کی آبادی کے مطابق تقسیم سیٹوں کی تعداد کے مطابق شمالی بھارت کی نمائندگی، جنوبی بھارت کے مقابلے بہت کم ہے. جہاں جنوب کی چار ریاستوں، تامل ناڈو، آندھرا پردیش، کرناٹک اور کیرالہ کو جن کی مشترکہ آبادی ملک کی کل آبادی کا صرف 21 فیصد ہے، کو 129 لوک سبھا کی سیٹیں مختص کی گئی ہیں جب کہ، سب سے زیادہ آبادی والے ریاست اتر پردیش اور بہار جن کی مشترکہ آبادی ملک کی کل آبادی کا 25.1 فیصد ہے کے حصے میں صرف 120 سیٹیں ہی آتی ہیں. فی الحال صدر اور عوامی بھارتی برادری کے دو نامزد اراکین کو ملا کر، ایوان میں اراکین کی تعداد 545 ہے.

مزید دیکھیے[ترمیم]