مائیکل فیراڈے

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
مائیکل فیراڈے
Faraday Cochran Pickersgill.jpg
1820ء میں تخلیق کی جانے والی مائیکل فیراڈے کی تصویر کا پورٹریٹ
پیدائش 22 ستمبر 1791 (1791-09-22)
نیونگٹن بٹس، سرے، انگلینڈ
وفات 25 اگست 1867 (عمر 75 سال)
ہیمپٹن کورٹ، سرے، انگلینڈ
سکونت انگلینڈ
قومیت برطانوی
میدان طبعیات اور کیمیاء
ادارے رائل انسٹیٹیوٹ
وجہِ معروفیت برائے برقناطیسی تحریض
Electrochemistry
Faraday effect
Faraday cage
Faraday constant
Faraday cup
Faraday's laws of electrolysis
Faraday paradox
Faraday rotator
Faraday-efficiency effect
Faraday wave
Faraday wheel
Lines of force
اثرات سر ہمفری ڈیوی
William Thomas Brande
اہم انعامات رائل میڈل (1835ء اور 1846ء)
کاپلے میڈل (1832ء اور 1838ء)
رمفورڈ میڈل (1846ء)
دستخط

مائیکل فیراڈے ایک انگلستانی سائنس دان تھا 22 ستمبر 1791ء کو انگلستان میں پیدا ہوا۔ اُس نے برقناطیسی قوت اور برقناطیسی کیمیا پر بہت کام کیا۔ اُس نے برقناطیسی تحریض (Electromagnetic induction) دریافت کیا۔ اگرچہ اُس نے بہت کم رسمی تعلیم حاصل کی تھی مگر آج سائنس کی تاریخ میں وہ ایک بہت اہم نام ہے[1]۔ بطور کیمیا دان اُس نے بنزین دریافت کی۔ البرٹ آئنسٹائن اپنے پرس میں اُس کی تصویر آئزک نیوٹن اور جیمز کلیرک ماکسویل کی تصویروں کے ساتھ رکھتا تھا[2]۔ مشہورسائنس دان ایرنسٹ ردرفورڈ کا کہنا ہے کہ جب ہم اُس کے ایجادات اور اُن کے اثرات سائنس اور صنعت پر دیکھتے ہیں تو کوئی اعزاز اتنا بڑا نہیں ہے کہ فیراڈے کو دیا جاسکے، جو کہ ہر زمانے کا عظیم ترین سائنس دان ہے۔ اُس نے اپنی زندگی میں سر کا خطاب دو دفعہ ٹھکرایا۔ اُس کا 25 اگست 1867ء کو اپنے گھر میں انتقال ہو گیا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ Hart, Michael H. (2000). The 100: A Ranking of the Most Influential Persons in History. New York: Citadel Press. ISBN 0-89104-175-3. .
  2. ^ "Einstein's Heroes: Imagining the World through the Language of Mathematics", by Robyn Arianrhod UQP, reviewed by Jane Gleeson-White, 10 November 2003, The Sydney Morning Herald.