مارکسیت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

مارکسیت سیاسی فلسفہ ہے جوکہ کارل مارکس کے اور فریڈرچ اینجیلز سے منسوب ہے۔ یہ نظریہ کارل مارکس کے نام سے منسوب ہونے کی وجہ سے مارکسیت کہلاتا ہے ۔

کارل مارکس

اس وقت بھی یورپی تعلیمی اداروں میں اس نظریہ کی تحقیق مختلف کلیوں میں موجود ہے۔ جن میں علم البشر، ذرائع ابلاغ، تمثیل گھر ، تاریخ ، عمرانیاتی نظریہ ، معاشیات، ادبی نکتہ چینی ، جمالیات ، اور فلسفہ شامل ہیں ۔

اردو نقاد اور ادبی نظریات دان احمد سھیل نے اپنی کتاب "ساختیات " ( تاریخ، نظریہ اور تیقید) میں ‘ ماکسیت اور ساختیات‘ کے حوالے سے لکھا ہے۔

          "مارکسی ساختیات جدید فکر و تیقید کا اہم موضوع رہا ہے۔ مارکسیت اور ساختیات ایک دوسرے سے الگ ھوتے ھوئے بھی کئے معنوں میں ایک دوسرے سے منسلک نظر آتے ہیں۔ تاریخی تناطر میں دیلھ جائے تو ساختیات اور ماکسیت دونوں میں  یہ اہم نکتہ مشترک ہے کہ ھر شے کے وجود میں اس کی ضد کے عناصر شامل ھوتے 

ہیں۔ ھر شے اپنے افتراق سے پہنچانی جاتی ہے۔ ھر شے میں مثبت اور منفی عناصر ایک دوسری سے برسرپیکار رہتے ہیں۔ جن کے سبب کائنات میں حرکت نظر آتی ہے اور تبدیلی کے عناصر بھی اس کشمکش مین در آتے ہیں۔ جن سے فکر کے نئے سرچشمے پھوٹتے ہیں"۔ (نئی دھلی، 1999، ۔۔صفحہ 163)


(