مستنجد باللہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

مستنجد باللہ، (وفات: ۱۱۷۰ء/۵۶۶ھ) یہ ایک لقب ہے۔ اس کا اصل نام یوسف بن متقفی تھا۔ یہ ایک عباسی خلیفہ تھا۔ اس نے ۱۱۶۰ء/۵۵۵ھ سے لے کر ۱۱۷۰ء/۵۶۶ھ تک خلافت کا عہدہ سنبھالا۔ یہ خلیفہ متقفی باللہ (اصل نام محمد بن مستظہر) کا بیٹا تھا۔ مستنجد باللہ اپنے باپ کی زندگی میں ہی ولی عہد نامزد ہوچکا تھا۔ اس کے انتقال کے بعد ۱۱۶۰ء/۵۵۵ھ میں اس کی خلافت کا آغاز ہوا۔

واقعات[ترمیم]

  • ۵۵۶ھ/۱۱۵۹ء میں کئی بغاوتیں ترکوں اور عربوں کی جانب سے ہوئیں۔ خلیفہ مستنجد باللہ نے ان کو فرو کیا۔
  • ۵۵۸ھ/۱۱۶۱ء میں خلیفہ مستنجد باللہ نے بنی اسد کے خلاف فوج کشی کی اور ان کو عراق سے نکال دیا۔
  • ۵۵۹ء/۱۱۶۲ء میں واسط میں بغاوت ہوئی، جسے فرو کیا گیا۔
  • شام و مصر کی اسلامی طاقت صلیبی حملوں میں مصروف رہی۔ نورالدین زنگی نے صلیبیوں سے کئی معرکے کیے۔
  • تمام بے جاٹیکس عوام پر معاف کر دیے گئے اور ضبط شدہ مال واپس کیا۔
  • کئی مقامات پر فتوحات حاصل ہوئیں۔
  • عراق، فارس اور دیگر مقامات اور علاقوں پر حکومت بغداد کا اثر و اقتدار قائم رہا۔
  • یہ زمانہ امن و امان اور مسلمانوں کے اطمینان کا زمانہ تھا۔
  • ملک تمام دالی فتنوں سے محفوظ رہا۔
  • ۱۱۷۰ء/۵۶۶ھ میں خلیفہ مستنجد باللہ کا بیماری کے بعد انتقال ہوا۔

حوالہ[ترمیم]


مستنجد باللہ
بنو ہاشم کی ذیلی شاخ
پیدائش: ؟ وفات: ۱۱۷۰ء
مناصبِ اہل سنت
پیشرو
متقفی باللہ
خلیفہ
۱۱۷۰ء/۵۶۶ھ/۵۵۵ھ–۱۱۳۶ء
جانشین
مستعفی بامرللہ