مقلوب (صنعت)

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

مقلوب (anagram) کا مکمل لغتی نام صنعتِ مقلوب ہے اور یہ علم لسانیات سے متعلق وہ شعبہ ہے کہ جس کو استعمال کرتے ہوئے کسی ایک لفظ میں موجود حروف ابجد کی ترتیب کو الٹ پلٹ (یعنی قلبِ ماہئیتِ اصل) کرتے ہوئے کسی نئے لفظ کے لیۓ استعارہ اختیار کیا جاتا ہو؛ مثال کے طور پر listen سے silent کا استعارہ۔ اس کو اردو میں حرف کی مناسبت سے تحریف بھی کہا جاتا ہے اور یونانی سے ماخوذ انگریزی میں بھی ana (پلٹ) اور gram (حرف) اس ہی مفہوم میں آتا ہے۔ صنعتِ مقلوب یعنی anagram اردو میں ایک عمومی اصطلاح ہے جبکہ اس کی متعدد خصوصی اقسام ہوتی ہیں جیسے مقلوبِ کل وغیرہ ؛ یعنی یوں کہا جاسکتا ہے کہ لفظ ، مقلوب سے لسانیات میں مراد الفاظ کے ابجد کو قلب کرنے کی ہوتی ہے اور اسی وجہ سے عربی میں اسے قلب بھی کہا جاتا ہے۔ مقلوب اصل میں قلب ہی سے بنا ہوا لفظ ہے لیکن چونکہ یہ اردو میں اپنے عام معنی میں دل کے لیۓ مستعمل ہے اس لیۓ مقلوب کا انتخاب کسی ممکنہ ابہام سے کنارہ کشی کے لیۓ بہتر رہتا ہے۔ مزید یہ کہ چونکہ صنعت مقلوب اور مقلوب کل کے الفاظ دوحرفی ہیں اور ایک ہی صنعتِ لسانیات کی جانب اشارہ کرتے ہیں اس وجہ سے اسے مختصر کر کے اردو ویکیپیڈیا پر مقلوب کا لفظ anagram کے لیۓ منتخب کیا گیا ہے؛ چند مقامات پر اس کو اس کے عمومی معنوں جیسے invertible کے لیۓ اختیار کیا گیا ہے۔ مقلوب کا لفظ چونکہ بطور anagram بہت کم ہی استعمال کیا جاتا ہے اور بالفرض اگر کہیں ابہام کا اندیشہ ہو تو پھر اس کا مکمل نام یعنی صنعتِ مقلوب درج کیا جاسکتا ہے۔ قلب یا تحریف کو anagram کا متبادل بنانے کی نسبت مقلوب کم ابہام کا امکان رکھتا ہے۔ اس ابتدائیے میں درج تمام اصطلاحی الفاظ ؛ یعنی ، تحریف ، قلب ، مقلوب ، صنعت اور استعارہ عربی زبان کے ہیں اور ابتدائیے میں درج معنوں میں ہی اردو زبان میں مستعمل ہیں جن کو حوالہ جات میں درج ربط پر ملاحظہ کیا جاسکتا ہے[1]

مزید دیکھیۓ[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ایک روئے خط اردو لغت پر ابتدائیے میں درج تمام الفاظ کا اندراج