میلاد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

میلاد یا مولد کا معنی ولادت کا وقت ہے۔ قرآن مجید میں حضرت یحیٰ علیہ السلام اور حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی ولادت کا ذکر ہے۔

حضرت یحیٰ[ترمیم]

حضرت یحیٰ علیہ السلام کے لیے قرآن میں آیت ہے۔ وَسَلاَمٌ عَلَيْه يَوْمَ وُلِدَ وَيَوْمَ يَمُوتُ وَيَوْمَ يُبْعَثُ حَيًّا ﴿15﴾ سورۃ مریم (15) "اور سلامتی ہے اس پر جس دن پیدا ہوا اور جس دن مرے گا اور جس دن مردہ اٹھایا جائے گا"

حضرت عیسیٰ[ترمیم]

حضرت عیسیٰ علیہ السلام کے میلاد کا ذکر قرآن میں یوں ہے۔ وَالسَّلاَمُ عَلَيَّ يَوْمَ وُلِدتُّ وَيَوْمَ أَمُوتُ وَيَوْمَ أُبْعَثُ حَيًّا ﴿33﴾ سورۃ مریم (33) "اور وہی سلامتی مجھ پر جس دن میں پیدا ہوا اور جس دن مروں اور جس دن زندہ اٹھایا جاؤں" اور عیسائیت میں عید ولادت مسیح بھی اسی معنی میں استعمال ہوتا ہے۔

عید میلاد النبی[ترمیم]

مسلمانوں میں میلاد یا مولد سے مراد سید الانبیاء حضرت محمد مصطفے صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی ولادت با سعادت ہے۔ یعنی عید میلاد النبی(عربی: مَوْلِدُ آلنَبِيِّ‎) کو کہا جاتا ہے۔ ‏ اسلامی کیلینڈر کے مطابق ہرسال 12 ربیع الاول کو عالم اسلام میں مذہبی جوش و جذبے اور عقیدت و احترام سے منایا جاتا ہے البتہ کچھ علماء اس تاریح پرمتفق نہیں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی آمد سے قبل ہر وہ کام ہوتا جو ہر لحاظ سے عیر اخلاقی تھاجسکے پاس طاقت ہوتی وہی سردار ہوتا اور جو چاہتا کرتا انسان منڈی میں فروخت کیئے جاتے عورت کی عزت کا کوئی خیال نہ تھا حتکہ اگر کسے کے گھر بچی پیدا ہوتی تو اسے زندہ دفن کر دیاجاتا ربیع کے معنی بہار اور اول پہلی یعنی حضور شاہ دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت پرگویا بہار ہی نہیں پہلی بہاریوںآئی کہ حضور شاہ دو عالم صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت پراللہ تعالی نے سب عورتوں کو[جو حاملہ تھیں ] بیٹے عطا فرمائے اور حضرت جبریل امین علیہ السلام نے امن و سلامتی کے مشرق ،مغرب میں اور کعبہ کی چھت پر جھنڈے لگائے (مشرق میں آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے گھر کی چھت پر مغرب میں مسجد اقصی (بیت المقدس ) کی چھت بر ) شروع میں قرآن مجید کی آیات کے ذریعے وضاحت کی گئی کہ اللہ کے دن یاد دلاو جس دن اللہ کی رحمت کا نزول ہوا وہ دن اللہ کا ، 2 اللہ کا حضرت عیسی علیہ السلام و حضرت یحی علیہ السلام کے پیدا ہونے وفات پانے اور دوبارہ زندہ اٹھاۓ جانے پرسلامتی سے ،آپ صلی اللہ علیہ وسلم کا آنا اور رحلت فرمانا رحمت آپ صلی اللہ علیہ وسلم کی ولادت پر اللہ تعالی کا سارے بیٹے عطا کرنا اور جھنڈے لگوانا میلاد کی خوشی کو ظاھر کرتے ہیں جس عید کے صدقے عیدیں ملیں اس عید کے دن مسلمان شکرانے کے نوافل ادا کرتے ہیں اور سارا دن درود وسلام پیش کرتے ہیں

نثار تیری چہل پہل پر ہزاروں عیدیں ربیع الاول سواۓ ابلیس کے جہاں میں سب ہی تو خوشیاں منا رہے ہیں


‏‎حوالہ

Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔