نفرت کلام

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

ناقابل دراندازیِ قانون تناظر میںنفرت کلام ایسے ابلاغ کو کہتے ہیں جو کسی شخص یا گروہ کو نسل، رنگ، مذکر مونث، معذوری، جنسی سمت، قومیت، مذہب، یا کسی خواص کی بنا پر بدنام کرے۔

قابل دراندازیِ قانون تناظر میں نفرت کلام' ایسے ابلاغ، عمل یا مظاہر کو کہتے ہیں جو اس بنا پر غیر قانونی ہو کیونکہ اس سے کسی تامین فرد یا گروہ کے خلاف زیادتی پر اکسانے کا خدشہ ہو، یا یہ کسی کی تذلیل کرتا ہو یا انہیں دھمکاتا ڈراتا ہو۔

مثالیں[ترمیم]

  • امریکی فوجی اداروں میں مسلمانوں کا خاتمہ کرنے کی تعلیم۔[1]