ونکلر، مینی ٹوبا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش

ونکلر کا چھوٹا سا شہر جس کی کل آبادی ۹۱۰۰ افراد ہے، کینیڈا کے صوبے مینی ٹوبا کے جنوبی حصے میں واقع ہے۔ پنمینا وادی کے سب سے بڑے شہر ہونے کی وجہ سے یہاں تجارت، زراعت اور صنعت عروج پر ہے۔ یہ شہر مینی ٹوبا میں ساتواں بڑا اور صوبے کے تیزی سے ترقی کرتے ہوئے شہروں میں سے ایک ہے۔

جغرافیہ اور موسم[ترمیم]

دریائے سرخ یعنی ریڈ ریور وادی کے مغربی کنارے پر واقع ونکلر کا شہر صوبائی شاہراہ نمبر ۱۴ اور ۳۲ پر واقع ہے۔ یہ شہر ونی پگ سے تقریباً ۱۰۰ کلومیٹر جنوب مغرب میں اور امریکی سرحد سے تقریباً ۷۰ کلومیٹر شمال مغرب میں واقع ہے۔ اس جگہ سرحد پر ہر وقت سرحد پار کی جا سکتی ہے۔ ونکلر قبل از تاریخ کی جھیل اگاسیز کے کناروں پر واقع ہے۔ جھیل کا ساحل آج سے کوئی ۱۰۰۰۰ سال قبل وجود میں آیا تھا۔ یہ جگہ ونکلر سے چند کلومیٹر مغرب میں ہے۔ ونکلر کی اوسط بلندی سطح سمندر سے ۲۷۲ میٹر ہے۔ مغرب میں زرخیز زمین آبپاشی اور آلو، مکئی اور چنوں کی پیداوار کے لئے بہترین ہے۔ مشرق میں بہتر مٹی موجود ہے جو چقندر، کینولا، چنوں، مکئی اور چھوٹے غلوں کے لئے مناسب ہے۔ ونکلر کا موسم کانٹی نینٹل نوعیت کا ہے۔ یہاں سرد اور خشک سرما جبکہ گرم اور اکثر خشک گرمیاں ہوتی ہیں۔ گرمیوں میں درجہ حرارت ۲۰ سے ۳۰ ڈگری جبکہ سردیوں میں منفی ۱۵ سے منفی ۲۵ تک رہتا ہے۔ ونکلر میں مینی ٹوبا بھر میں سب سے زیادہ گرمیاں پڑتی ہیں۔ سالانہ بارش کی مقدار ۴۱۶ مم جبکہ برفباری سے ۱۱۹ اعشاریہ ۷ سینٹی میٹر برف گرتی ہے۔ ونکلر میں اوسطاً ۱۲۵ دن سالانہ درجہ حرارت صفر درجے سے اوپر رہتا ہے۔

معیشت[ترمیم]

ونکلر کا علاقہ جنوبی مینی ٹوبا کا معاشی مرکز ہے۔ ریٹیل کا کاروبار تقریباً ۱۷۰۰۰ گھروں کو سنبھالتا ہے۔ ۴۳۸۰ افراد ونکلر میں کام کرتے ہیں۔ اس میں سے ۳۰ فیصد افراد صنعتی شعبے سے وابستہ ہیں۔ شہر میں دوسرا بڑا آجر جو ۲۰ فیصد آبادی کو روزگار مہیا کرتا ہے، تعلیم اور صحت کا شعبہ ہے۔ ونکلر میں حالیہ برسوں میں بہت ساری نئی صنعتیں لگی ہیں۔ ان میں رہائشی گاڑیاں، متحرک گھر، ہاؤس بوٹ، زرعی آلات، کھڑکیاں اور دروازے بنانے کی صنعتیں شامل ہیں۔ دو فاؤنڈریاں بھی یہاں کام کرتی ہیں۔ ونکلر کا زرعی شعبہ صوبے بھر میں سب سے زیادہ پیداواری اور وسیع ہے۔ ونکلر کے آس پاس کا علاقہ انتہائی زرخیز ہے جو آلو کی کاشت کے لئے بہترین سمجھا جاتا ہے۔ تاہم دیگر فصلوں میں گندم، کینولا، مکئی اور چنے شامل ہیں۔ سور اور مویشی بھی پالے جاتے ہیں اور ڈیری فارموں پر پنیر بنتی ہے۔ شہر کے بسائے جانے کے وقت سے لے کر اب تک یہاں کاروبار ترقی پر ہے۔ آج بھی ہر سال ۱۰ سے ۲۰ نئے کاروبار یہاں شروع ہوتے ہیں۔ ۲۰۰۲ میں کل ۵۵ نئے کاروبار شروع ہوئے تھے۔ اس کی وجہ کم شرح ٹیکس، جائیداد کی معقول قیمت اور شہر اور کاروباری اداروں کے درمیان تعاون ہے۔ اس کی ایک مثال شہری حکومت کی جانب سے بنایا جانے والا انکیوبیٹر مال ہے جہاں پانچ دفاتر کی جگہ موجود ہے۔ یہ دفاتر نئے کاروباروں کو ابتداء میں معقول کرائے پر جگہ مہیا کرتے ہیں۔ جب یہ کاروبار پھیل جاتے ہیں تو ان کے دفاتر یہاں سے منتقل ہو جاتے ہیں اور ان کی جگہ نئے کاروبار لے لیتے ہیں۔

نقل و حمل[ترمیم]

ونکلر میں دیگر شہروں سے رابطے کا اہم ذریعہ یہاں کی شاہراہیں ہیں۔ ونی پگ، امریکی سرحد اور دیگر شہروں کو ایک سے زیادہ سڑکیں جاتی ہیں۔ ونکلر کا ہوائی اڈہ شہری صنعتی پارک میں موجود ہے۔ یہاں دو رن وے ہیں جن مین سے ایک پختہ جبکہ دوسرا گھاس کی پٹی پر مشتمل ہے۔ تاہم نئے اور بڑے جہازوں کے لئے شہر سے ۹ کلومیٹر دور مورڈن کا ہوائی اڈہ موجود ہے جہاں ۱۲۱۲ میٹر طویل دو پختہ رن وے موجود ہیں۔ شہر میں ایک ٹیکسی سروس بھی موجود ہے۔ گرے ہاؤنڈ بھی یہاں چلتی ہے۔ پرولیٹر اور ڈی ایچ ایل بھی یہاں موجود ہیں۔ کینیڈین پیسیفک ریلوے کی ایک شاخ یہاں کے صنعتی پارک کو جاتی ہے۔

آبادی[ترمیم]

ونکلر میں آبادی میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے۔ ۲۰۱۰ کی مردم شماری کے مطابق یہاں کی آبادی ۹۱۰۶ ہے۔ مینو نائٹ نامی مذہب یہاں اکثریتی مذہب ہے جو ۵۴ فیصد سے زیادہ پیروکار رکھتا ہے۔ دیگر مذاہب میں مختلف عیسائی گروہ ہیں۔ اوسطاً گھریلو آمدنی ۴۴۲۲۷ ڈالر سالانہ ہے۔ تاہم اوسطاً مردوں کی عام نوکری سے ۳۴۳۲۶ ڈالر جبکہ خواتین کی اوسطاً عام نوکری سے ہونے والی تنخواہ سالانہ ۲۳۵۴۶ ڈالر بنتی ہے۔ شہر کی تقریباً ۱۶ فیصد آبادی غیر ملک میں پیدا ہوئی ہے۔