پاکستان تحریک انصاف

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
پاکستان تحریک انصاف
شریک چیرمین شاہ محمود قریشی
سینئر نائب صدر حامد خان
نائب صدر اعجاز چوہدری
ایڈمرل جاوید اقبال
شاہد ذوالفقار علی
یوسف ملک گبول
صدر خواتین ونگ فوزیہ قصوری
سنٹرل انفارمیشن سیکٹری شفقت محمود
نعرہ انصاف، انسانیت، خودداری
قیام اپریل 25, 1996 (1996-04-25)[1]
صدر دفتر سنٹرل سیکریٹریٹ، H-07، پارلیمنٹ لاجز <br< اسلام آباد, پاکستان
خیالیت اسلامی جمہوریت [حوالہ درکار]
رنگ سبز اور سرخ
انتخابی علامت
بلا
موقع حبالہ
insaf.pk
پرچم جماعت
Pakistan Tehreek-e-Insaf flag.PNG
پاکستان

مقالہ بسلسلہ مضامین:
پاکستان کی حکومت اور سیاست



پاکستان تحریک انصاف پاکستان کی ایک سیاسی جماعت ہے۔ پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ مشہور سابق کرکٹر عمران خان ہیں۔ "انصاف، انسانیت اور باعث فخر"جماعت کا نعرہ ہے۔ عمران خان اس سیاسی جماعت کے چئیرمین ہیں اور اس کے علاوہ وہ براڈفورڈ یونیورسٹی کے چانسلر بھی ہیں۔ عمران خان نے پولیٹیکل سائنس، اکنامکس اور فلسفہ میں ماسٹرز کی ڈگریاں حاصل کی ہوئی ہیں۔ حال ہی میں عمران خان کی طرف پاکستان کے موجودہ نظام کی خرابیوں کو دور کرنے کے لئے ایک حل پیش کیا گیا ہے۔ اس کے مندرجہ ذیل تین نکات ہیں:

  1. آزاد الیکشن کمیشن
  2. آزاد عدلیہ
  3. آزاد احتساب بیورو

پارٹی اس حل پر عمل درآمد کے لئے کوششیں جاری رکھے ہوئے ہے۔ تحریک انصاف اس وقت اپوزیشن کی ایک جماعت کی حیثیت سے اپنا کردار ادا کر رہی ہے۔ اس تحریک کا پاکستانی مڈل کلاس لوگوں پر بہت گہرا اثر ہے۔ اس کے موجودہ مقاصد میں سے ایک فوج کو بیرکوں میں واپس بھیجنا ہے۔

2002ء کے انتخابات[ترمیم]

20 اکتوبر 2002ء کے قانون سازی اسمبلی کے انتخابات میں اس پارٹی کو 0.8 فیصد ووٹ ملے۔ اسی طرح ان انتخابات میں کل 272 ممبران میں سے ایک ممبر تحریک انصاف کی طرف سے منتخب ہوا۔ اسی طرح صوبائی انتخابات میں صوبہ سرحد کی طرف سے تحریک انصاف کا ایک رکن منتخب ہوا۔

2008ء کے انتخابات[ترمیم]

2013ء کے انتخابات[ترمیم]

2013 کے انتخابات میں تحریک انصاف ایک مضبوط پارٹی بن کر ابھری ہے۔قومی اسمبلی میں اس کی اچھی خاصی نشتیں ہیں، جبکہ صوبہ خیبر پختونخواہ میں اس پارٹی کی حکومت ہے جبکہ پنجاب میں دوسری اور سندھ میں تیسری بڑی پارٹی ابھری۔عام انتخابات میں ووٹوں کے لحاظ سے دوسری اور سیٹوں کے لحاظ سے تیسری بڑی پارٹی بنی۔ عمران خان کا کہنا ہے کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی تھی ورنہ تحریک انصاف کی حکومت ہوتی،اس بات نے ایک نیا روخ لیا آزادی مارچ کی شکل میں۔

منشور[ترمیم]

پاکستان تحریک انصاف کے راہنما عمران خان ایک عظیم کرکٹر بھی رہے ہیں

تحریک کا منشور یہ ہے:

قوم کی عزت نفس کو برقرار رکھتے ہوئے ایک ایسا منصف معاشرہ تشکیل دینا کہ جس کی بنیاد میں انسانی اقدار شامل ہوں۔ تحریک انصاف حقیقی اقتدار اور لوگوں کو ان کی مرضی کے سیاسی اور معاشی مقاصد کو معاشرتی، ثقافتی اور مذہبی اقدار کے مطابق چننے کا اصل حق دے گی۔ ہم ایک ایسی تحریک کے داعی ہیں جس کا مقصد انصاف پر مبنی آزاد معاشرہ ہو۔ ہم جانتے ہیں کہ قومی نشاۃ ثانیہ تبھی جنم لے سکتی ہے اگر لوگ حقیقی معنوں میں آزاد ہوں۔ پاکستان تحریک انصاف لوگوں سے خلوص نیت سے رابطہ کرتی ہے اور اسے تاریخی حقائق کا علم بھی ہے اور یہ وعدہ کرتی ہے کہ:

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ Talbot 1998, p. 339