پطرس بخاری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
پطرس بخاری
پطرس بخاری
پطرس بخاری
ادیب
پیدائشی نام سید احمد شاہ بخاری
قلمی نام پطرس
ولادت 1 اکتوبر 1898ء پشاور
ابتدا لاہور، پاکستان
وفات 5 دسمبر 1958ء نیو یارک، ریاستہائے متحدہ امریکہ
اصناف ادب نثر
ذیلی اصناف مزاح
معروف تصانیف پطرس کے مضامین

احمد شاہ بخاری 1 اکتوبر 1898ء میں پشاور میں پیدا ہوئے۔ آپ کے والد سید اسد اللہ شاہ پشاور میں ایک وکیل کے منشی تھے۔ ابتدائی تعلیم پشاور میں حاصل کی اور اس کے بعد گورنمٹ کالج لاہور میں داخل ہوئے اور اعزازی نمبروں کے ساتھ ایم اے پاس کیا۔ طالب علمی کے زمانے میں انہیں شعر و ادب سے گہری دلچسپی تھی۔ گورنمنٹ کالج لاہور کے میگزین (راوی) کے ایڈیٹر بھی رہے۔ ایم اے کرنے کے بعد آپ انگلستان چلے گئے اور کیمبرج یونیورسٹی سے انگریزی ادب میں ڈگری حاصل کی۔ وہاں کے اساتذہ کی رائے تھی کی بخاری کا علم اس قدر فراخ اور وسیع و بسیط ہے کہ ایک انگریز کے لیے بھی اتنا علم اس عمر میں رکھنا کم وبیش ناممکن ہے۔ پطرس بخاری اپنے ایک شاہکار مضمون ”کتے“ میں یوں رقمطراز ہیں

علم الحیوانات کے پروفیسروں سے پوچھا سلوتریوں سے دریافت کیا ۔ خود سرکھپاتے رہے لیکن کچھ سمجھ میں نہ آیا کہ آخر کتوں کا کیا فائدہ ہے۔۔۔کہنے لگے وفادار جانور ہے اب جناب اگر وفادرای اس کا نام ہے تو شام کے سات بجے جو بھونکنا شروع کیا تو لگاتار بغیر دم لئے صبح کے چھ بجے تک بھونکتے ہی چلے گئے تو ہم لنڈورے ہی بھلے۔


وطن واپس آنے پر سنٹرل ٹیننگ کالج اور پھر گورنمنٹ کالج میں انگریزی ادبیات کے پروفیسررہے۔ 1937ء میں آل انڈیا ریڈیو کا محکمہ قائم ہوا تو بخاری کی خدمات مستعار لی گئیں ۔ اور وہ سات برس تک بطور ڈائریکٹر ریڈیو سے منسلک رہے۔

قیام پاکستان کے بعد آپ لاہور آگئے اور گورنمنٹ کالج لاہور کے پرنسپل مقرر ہوئے۔ 1950ء میں آپ کو اقوام متحدہ میں پاکستان کا مستقل نمائندہ بنا کر بھیجا گیا۔ اس عہدے پر 1954ء تک فائز رہے۔ 1955ء میں اقوام متحدہ کے شعبہ اطلاعات میں ڈپٹی سیکرٹری جنرل منتخب ہوئے۔ آپ دسمبر 1957ء میں ریٹائر ہونے والے تھے اور کولمبیا یونیورسٹی میں پروفیسری قبول کرچکے تھے مگر موت نے مہلت نہ دی اور 5 دسمبر 1958ء کو صبح نیویارک میں حرکت قلب بند ہوگئی۔

اصل نام سید احمد شاہ بخاری تھا لیکن اپنے قلمی نام پطرس سے زیادہ مشہور ہوئے۔ ے عظیم مصنف 5 دسمبر 1958 کو نیویارک امریکا مین وفات پا گۓ−

مزید دیکھیے[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

پطرس کے متعلق موقع حبالہ