کارنیل رونالڈ ویسٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
کارنیل رونالڈ ویسٹ

Cornel West in 2008
پیدائش Cornel Ronald West
2 جون 1953 (1953-06-02) ‏(61)
Tulsa, Oklahoma, U.S.
عہد 20th-/21st-century philosophy
علاقہ Western Philosophy
مکتبہ فکر Neopragmatism
موجودیت
Africana Philosophy
Historicism
شعبہ عمل Political Philosophy
Philosophy of religion
اخلاقیات
Race
جمہوریت
افکار و نظریات Race Matters
Democracy Matters
مؤثر شخصیات مارٹن لوتھر کنگ جونیئر, میلکم ایکس, W. E. B. Du Bois, James Cone, کارل مارکس, فریڈرک اینگلز, Karl Kautsky, György Lukács, Ralph Waldo Emerson, Søren Kierkegaard, شوپنہائر, Leszek Kolakowski, Herman Melville, Michel Foucault, Antonio Gramsci, Richard Rorty, ولیم جیمز, John Dewey, Giambattista Vico, Frankfurt School
متاثر شخصیات Gary Peller, Kobena Mercer

کارنیل رونالٹ ویسٹ ( Cornel Ronald West) ، امریکی فلسفی، ماہر مذھبیات، عوامی دانشور، مزاحمت کار،استاد اور ادیب ہیں۔ وہ 2 جون 1953 میں امریکی ریاست اوکلوھوما کے شہر ' تلسا' میں پیدا ھوئے۔ نوجوانی کے دن کیلےفورینا کے درالحکومت ' سیکریمنٹو' میں بسر ھوا۔ کارنیل ویسٹ نے انڈر گریجیوٹ ڈگری ہارورڈ یونیورسٹی سے حاصل کی۔ وہ پہلے سیاہ فام امریکی تھے جنہوں نے 1980 میں پرنسٹن یونیورسٹی سے فلسفے میں پی ایچ ڈی کے سند حاصل کی۔ وہ ہارورڈ یونیورسٹی میں پروفیسر رھے۔ 2002 میں کارنیل ویسٹ کی ہارورڈ یونیورسٹی کے صدر لارنس سے انقلابی اور لبرل مذھبی سوچ کے سبب شدید اختلاف اور تنازعہ پیدا ھوا اور وہ ہارورڈ یونیورسٹی کو خیر باد کہنے پر مجبور ھو گئےاور پھر جامعہ پرنسٹن میں پروفیسرمقرر ھوئے۔ آج کل نیویارک کی" یونین تھیولوجیکل سمینری" میں تدریسی فرائص انجام دے رھے ہیں۔ وہ پیرس یونیورسٹی میں بھی پڑھاتے ہیں۔ ان کا اصل تدریسی میدان ' امریکی نسلی مطالعے' ہیں۔ ان کے والد اوردادا بیپٹست گرجے کے مبلغ تھے۔ ابتدائی مذھبی تعلیم حاصل کرنے کے بعد انھوں نے سیاست میں دلچسپی لینا شروع کی۔ انھوں نے متعدد بارانسانی اور شہری آزادیوں کے حصول کے لیےاور امریکہ میں اقلیتون پر مظالم کے خلاف بڑے بڑے جلسے، جلوسوں اور مظاہروں میں شرکت کی۔ وہ بچپن میں میلکم ایکس (1925۔1965 ) کی عسکریت پسند متشدد تنظیم ' بلیک پینتھر'سے متاثر رھے۔ کارنیل ویسٹ سیاسی طور پر "سوشلسٹ ڈیموکریٹ" مشہور ھوئے مگر وہ زیادہ تر مذھبی اور نسلی مطالعوں اور مباحث میں مصروف رھے۔ وہ اپنے آپ کو 'غیر مارکسی سوشلسٹ' کہتے ہیں کیونکہ ان کو کارل مارکس (1818.1883) کے مذھبی نظریات اور خیالات سے اتقاق نہیں ہے۔ کارنیل ویست مارکس کے معاشی نظریات، تاریخی مادیت، طبقاتی جدوجہد، قدر زائد، استحصال اور مغائرت کے نظریات اور تصورات کو تسلیم کرتے ہیں۔ کارنیل ویسٹ عوامی قسم کے دانشور ہیں۔ وہ غریبوں کے کھانے پینے کے کئی منصوبوں کے سرپرست ہیں۔ گرجوں میں بھی سرگرم ہیں۔ جیلوں میں میں قیدیوں کی بہبود میں بڑہ چڑ کر حصہ لیتے ہیں۔ ویسٹ امریکہ کی ایک چھوٹی سی سیاسی جماعت، " ڈیموکریٹ سوشلسٹ امریکہ " کے بنیادی اور سرگرم رکن ہیں۔ وہ امریکی صداراتی انتخابات میں ڑیموکریٹ پارٹی کا ساتھ دیتے ہیں۔ مگر اس کی غلط پالیسوں پر کھل کر نہایت دلیری سے تنقید بھی کرتے ہیں۔

2000 ء میں ڈیموکریٹ پارٹی کے صداراتی بل بریڈلے کے مشیر خصوصی تھے۔ عراق جنگ کے موقعے پر انھوں نے سابق صدر بش کی پالیسوں پر نکتہ چینی کرتے ھوئے اسے 'غیر سچی حکمت عملی' کہا۔ کارنیل ویسٹ بنیادی طور پر ادبی نقاد نہیں ہیں لیکن انھوں نے ادبی نظریاتی تنقید اورادبی مباحث اور مکالموں میں بڑ چڑ کر حصہ لیا۔ ان کی ادبی فکریات منفرد نوعیت کی ہیں۔ کچھ دن قبل ان کا ناول نگار بیں اوکری (BEN OKRI) سے "ادب اور قوم" کے موضوع پر بڑے معرکے کو مکالمہ ھوچکا ہے۔ فلسفی پاسکل اور روسی ادیب چیخوف کا گہرا مطالعہ کرچکے ہیں۔1994 میں ان کی امریکی نسلی تعلقات پر ایک کتاب شائع ھوچکی ہے جس کی چار/4 سو ہزار جلدیں فروخت ھوچکی ہیں۔ وہ بیس /20 سے زائد کتابیں لکھ چکے ہیں۔ پچیس /25 سے زیادہ دستاویزی فلموں میں جلوہ گر ھوچکے ہیں۔ کارنیل ویسٹ اپنے آپ کو 'پیغبر' کہتے ہیں۔ وہ نئی عملیت، استدلال، فلسفہ، نسلیات، ماورائیت،افریقی مطالعے، تاریخیت، مارکیست،الہیات اور اور جمہوری دبستانوں سے منسلک ہیں۔ انھوں نے مارکس کی تاریخیت کو کو اچھوتے انداز میں مطالعہ اور تجزیہ کیا ہے اور مارکس کے اخلاقی نظریات کو نئی جہات کے ساتھ پیش کیا۔ جو ساختیاتی نقد وفکر کی منہا جیات سے قریب ہے۔ کارنیل ویسٹ نے کئی امریکی سازشی نظریات کو بے نقاب کیا ہے۔ کچھ ماہ قبل انھیں پرنسٹن کے کیمپس میں دیکھا تھا۔ وھی ساٹھ/60 دہائی کے سیاہ فام امریکی انقلابی مزاحمت کار کی وضع قطع، چہرے پر بے ہنگم ڈارھی، بے ترتیب دانت، چہرے پر کالے فریم کا موٹا چشمہ، چال میں سبک رفتاری اور وھی روایتی سیاہ نوجوانوں والی حرکات و سکنات ان کے مزاج کا امتیازھے۔104 فارن ہائیٹ گرمی میں تھری پیس سوٹ پہنے ،پسنے میں شرابور چلے جارھے تھے۔ کارنیل ویسٹ عہد حاضر کے ایک انسان دوست عوامی فلسفی اور روشن خیال دانش ور ہیں۔ مغرب سے باہر ان کو لوگ قدرے کم ہی جانتے ہیں۔ اردو میں ان کی فطین طبع فکریات پرابھی تک غالبا کوئی تحریر نظر سے نہیں گزری۔