یوحنا کی انجیل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
عہدنامہ جدید

مصنف[ترمیم]

اس انجیل کا مصنف یوحنا رسول ہے

زمانہ تصنیف[ترمیم]

یہ انجیل یسوع (کی موت اور زندہ ہو جانے )کے کئی سال بعد غالباً 90 تا 96 عیسوی میں لکھی گئی۔

تعارف و مندرجات[ترمیم]

اس انجیل کی غرض و غایت یہ ہے کہ اس کے پڑھنے والے یسوع پر ایمان لائیں اور آپ کے نام سے ہمیشہ کی زندگہ پائیں۔(باب 20: آیت 31)۔ اس انجیل سےظاہر ہے کہ یسوع ایک عظیم شخص تھے۔ آپ کے بہت سے معجزے جو دوسری کتابوں میں درج نہیں اس کتاب میں درج ہیں۔یسوع کی موت اور زندہ ہو جانے کے بعد اپنے شاگردوں پر ظاہر ہونے کے واقعات اس انجیل میں خاص طور پر بیان کیے گئے ہیں۔یہ انجیل بہ نسبت دوسری انجیلوں کے یسوع کی الوہیت اور آپ کی زندگی کی تفسیر و تعبیر پر زیادہ زور دیتی ہے۔ آپ کی شخصیت کے اظہار کے لیے کئی استعارے استعمال کیے گئے ہیں، مثلاً نور، حق، محبت، اچھا چرواہا، دروازہ، قیامت اور زندگی، حقیقی روٹی وغیرہ۔ باب 14 تا 17 میں جو مواد بیان کیا گیا ہے۔اس سے یسوع کی اُس گہری محبت کا جو آپ اپنے ایمان لانے والوں سے رکھتے ہیں اور اُن اطمینان کا جو آپ پر ایمان لانے سے حاصل ہوتا ہے، بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے۔

Incomplete-document-purple.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کرکے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔