'3 سرا اور '5 سرا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
:چھلانگ بطرف رہنمائی، تلاش
سب سے بالائی شکر کے سالمہ میں '5 سرے پر اور سب سے نچلے شکر کے سالمہ میں '3 سرے پر ہائیڈروآکسائل گروہ موجود ہیں جبکہ درمیانی شکر کے سالمہ کے دونوں یعنی '5 اور '3 سروں پر فاسفیٹ گروہ ہیں

سالماتی حیاتیات میں '3 سرا اور '5 سرا کی اصطلاحات ڈی این اے کے سروں کے ليے استعمال کی جاتی ہیں اور انکو انگریزی میں '3 end اور '5 end کہا جاتا ہے۔ '3 سرے پر ڈی آکسی رائبوز شکر کے کاربن بمقام 3 پر ایک ہائیڈروآکسائل یا (ڈی این اے کے بڑھاؤ اور ایک نیا قاعدہ (A G C T آراین اے کی صورت میں U) جڑ جانے کے بعد) فاسفیٹ ، جبکہ '5 سرے پر ڈی آکسی رائبوز شکر کے کاربن بمقام 5 پر ایک ہائیڈروآکسائل یا (ڈی این اے کے بڑھاؤ کی صورت میں A G C T میں سے کوئی ایک اور آراین اے کی صورت میں U جڑ جانے کے بعد) فاسفیٹ پایاجاتا ہے۔

3 اور 5 پر ' کا نشان استعمال کرنے کی وجہ یہ ہے کہ شکر کی طرح پائریمیڈین اور پیورن میں بھی کاربن کی اعداد کاری کی جاتی ہے اور مغالطہ سے بچاؤ کی خاطر اور انکی اعداد کاری کو شکر کی اعداد کاری سے منفرد کرنے کی خاطر شکر کے سالمہ کے کاربنوں پر ' کا نشان لگایا جاتا ہے۔ گو کے ان سروں کو سرا لکھا جاتا ہے لیکن عموماً 3-اولی (3-prime) اور 5-اولی (5-prime) پڑھا جاتا ہے۔

'3 سرے پر موجود ہائیڈروآکسائل گروہ پیوستگی کے ليے لازمی ہے اور اسی وجہ سے اس سرے پر پیوستگر (ligase) نئے قاعدے جوڑ جوڑ کر ڈی این اے کی طوالت میں درکار حد تک اضافہ کرتا چلا جاتا ہے۔ اور ڈی این اے تخلیق کا یہ عمل ہمیشہ 5-اولی سے 3-اولی کی جانب ہی ہوتا ہے۔

بہ الفاظ سہل[ترمیم]

سادہ سے الفاظ میں اوپر بیان کردہ بات کو یوں کہ سکتے ہیں کہ DNA کے مالیکیول کے دو سرے ہوتے ہیں۔ اسکے اگلے سرے کو سرا 5 اور نچلے کو سرا 3 کا نام دیا جاتا ہے۔ اسکی وجہ یہ ہے کہ ہر ڈی این کے کے سالمے میں جو شکر کا سالمہ ہوتا ہے اس میں 5 کاربن جوہر ہوتے ہیں جنکو '1, '2, '3, '4 اور '5 کے اعداد سے یاد کیا جاتا ہے۔ DNA کے سالمے کے جس سرے کے '5 کاربن پر ایک OH ہوتا ہے اسکو '5 سرا اور جس سرے کے '3 کاربن پر OH ہوتا ہے اسکو '3 سرا کہتے ہیں۔