آستانہ میر شمس الدین اراکی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
آستانہ میر شمس الدین اراکی
میر شمس الدین اراکی
Mirshamsuddinaraqi.jpg
زیارت گاہ کا اندرونی منظر
آستانہ میر شمس الدین اراکی is located in جموں و کشمیر
آستانہ میر شمس الدین اراکی
جموں و کشمیر کے نقشے میں مقام
آستانہ میر شمس الدین اراکی is located in بھارت
آستانہ میر شمس الدین اراکی
آستانہ میر شمس الدین اراکی (بھارت)
بنیادی معلومات
متناسقات33°48′N 75°06′E / 33.80°N 75.10°E / 33.80; 75.10متناسقات: 33°48′N 75°06′E / 33.80°N 75.10°E / 33.80; 75.10
مذہبی انتساباسلام
بلدیہچاڈورہ
ضلعبڈگام
ریاستجموں و کشمیر
صوبہکشمیر
ملکہندوستان
سنہ تقدیس1910
مذہبی یا تنظیمی حالترواں
ویب سائٹwww.raheislam.org/agaaraqishrine
بانیآغا سید یوسف الموسوی
تفصیلات
گنبد01
مینار02

میر شمس الدین اراقی یا زیارت میر شمس الدین اراقی یا اراقی کا مزار کشمیری مسلمانوں کا ایک مذہبی مقام ہے جو چاڈورہ، بڈگام میں واقع ہے۔ اس مزار میں میر شمس الدین اراقی اور ملک حیدر جو ایک مورخ تھا کو دفن کیا گیا ہیں۔ [1] [2] [3] یہ مزار چاڈورہ ، بڈگام کے میدانی علاقوں میں واقع ہے۔ [4] یہ مزار آغا سید یوسف الموسوی نے خود میر شمس الدین اراقی کے اعزاز کے لئے تعمیر کیا تھا۔ [5]

میر شمس الدین اراقی[ترمیم]

میر سید محمد اصفانی عرف میر شمس الدین اراقی ایک ایرانی صوفی مسلمان بزرگ تھے ، جو 15 ویں صدی کے ایک ایرانی صوفی محمد نوربخش قہستانی کے زیر اہتمام تعارف کروانے کے لئے مشہور تھے جنھوں نے نوربخشیہ مکتب اسلام کو اپنا نام دیا تھا ۔ [6] اراقی جموں و کشمیر میں شیعہ صوفیوں کے حکم کا ایک حصہ تھا جس نے وادی کشمیر اور اس کے آس پاس کے علاقوں کے سماجی تانے بانے کو بہت متاثر کیا۔ [7]

موت[ترمیم]

اراقی کی وفات 1515 میں ہوئی اور انہیں جموں و کشمیر کے سری نگر کے زڈی بل میں دفن کیا گیا۔ [8] [9] بعد میں ان کی لاش کو نامعلوم وجوہات کی بناء پر چاڈورہ منتقل کیا گیا ، جہاں اسے فی الحال شمس الدین اراقی یا اراقی کے مقبرے میں دفن کیا گیا ہے۔ اراقی شیعہ اسلام کے ساتویں امام موسیٰ الکاظم کی اولاد تھی۔ [10]

میر شمس الدین اراقی کا خاندانی درخت

نماز جمعہ[ترمیم]

لوگ مزار پر نماز جمعہ پڑھتے ہیں۔ مجلس بھی مزار پر ہوتی ہے۔ [11] وادی بھر کے لوگ یہاں مزار کی زیارت کے لئے آتے ہیں۔ انجمن شرعی شیعیان مزار کے متولی ہیں۔

منظر نامے[ترمیم]

اس مزار کو دیوار کی دیوار سے محفوظ کیا گیا ہے۔ اس سے متعدد غسل خانے منسلک ہیں۔ زائرین اور مسافروں کے لئے بہت سے کمرے بنائے گئے ہیں۔ مزار اور اس کے صحن کا رقبہ تقریبا 10کنال ہے۔ وبائی بیماری کوویڈ 19 کے سبب یہ مزار 2020 میں مستقل طور پر بند ہوگیا تھا۔ اکتوبر 2020 میں اس مزار کی مناسب صفائی کی گئی تھی اور عازمین کے لئے دوبارہ کھول دی گئی تھی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Ziyarat E Mir Shams-ud-Din Araqi". 
  2. "Thousands join Shia leader's funeral - Aga Sahib laid to rest in Budgam". dailyexcelsior.com. 2002-08-23. 27 ستمبر 2007 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  3. تاریخ کشمیر مطبوعہ از راہ اسلام آرگنائزیشن
  4. "Noted scholar Aga Syed Muhammad Fazlullah passes away". thekashmirhorizon.com. 
  5. تاریخ کشمیر مطبوعہ از راہ اسلام آرگنائزیشن
  6. Shiri Ram Bakshi (1997). Kashmir: Valley and Its Culture. Sarup & Sons. صفحہ 231. ISBN 978-81-85431-97-0. 
  7. تاریخ کشمیر مطبوعہ از راہ اسلام آرگنائزیشن
  8. تاریخ شیعیان کشمیر
  9. تاریخ کشمیر مطبوعہ از راہ اسلام آرگنائزیشن
  10. تاریخ کشمیر مطبوعہ از راہ اسلام آرگنائزیشن
  11. تاریخ کشمیر مطبوعہ از راہ اسلام آرگنائزیشن