آسٹریلیا کرکٹ ٹیم کا دورہ پاکستان 2021–22ء

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
آسٹریلیا کرکٹ ٹیم کا دورہ پاکستان 2021–22ء
Flag of Pakistan.svg
پاکستان
Flag of Australia.svg
آسٹریلیا
تاریخ 4 مارچ – 5 اپریل 2022
کپتان بابر اعظم پیٹ کمنز (ٹیسٹ)
ایرن فنچ (آسٹریلوی کرکٹ کھلاڑی) (ایک روزہ اور ٹی/20)
ٹیسٹ سیریز
ایک روزہ بین الاقوامی سیریز
ٹی-20 بین الاقوامی سیریز

آسٹریلوی کرکٹ ٹیم مارچ اور اپریل 2022ء میں تین ٹیسٹ ، تین ایک روزہ بین الاقوامی (ODI) اور ایک ٹوئنٹی 20 بین الاقوامی (T20I) میچ کھیلنے کے لیے پاکستان کا دورہ کرنے والی ہے۔ [1] [2] ٹیسٹ سیریز 2021-2023 ICC ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کا حصہ بنے گی، اور ایک روزہ بین الاقوامی سیریز افتتاحی 2020-2023 آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ سپر لیگ کا حصہ بنے گی۔ [3] [4] 1998 کے بعد آسٹریلیا کا پاکستان کا یہ پہلا دورہ ہوگا۔ [5] ٹیسٹ سیریز پہلی بار تھی جب ٹیموں نے بیناؤڈ-قادر ٹرافی کے لیے کھیلا تھا، جس کا نام سابق بین الاقوامی کرکٹ کھلاڑیوں رچی بیناؤڈ اور عبدالقادر کے نام پر رکھا گیا تھا۔ پہلا ٹیسٹ ڈرا پر ختم ہوا، ٹیموں نے پانچ دن کا کھیل ختم ہونے سے پہلے ہاتھ ملایا۔ پورے میچ میں، پاکستان کا مجموعی اسکور 4 وکٹوں پر 728 رنز تھا، آسٹریلیا کے اسٹیو اسمتھ نے کہا کہ وکٹ "مردہ" اور سومی تھی۔ میچ ریفری رنجن مدوگالے نے بعد میں پچ کو "اوسط سے کم" قرار دیا۔ دوسرا ٹیسٹ بھی پانچویں دن ڈرا ہو گیا، جب آسٹریلیا نے اپنی پہلی اننگز 556/9 پر ڈکلیئر کر دی تھی، پاکستان کے بابر اعظم نے چوتھی اننگز میں 196 رنز بنائے تھے۔ آسٹریلیا نے تیسرا ٹیسٹ پانچویں دن کھیل کے آخری سیشن میں 115 رنز سے جیت کر سیریز 1-0 سے جیت لی۔ یہ 2011 کے بعد ایشیا میں آسٹریلیا کی پہلی ٹیسٹ سیریز جیت تھی، اور 2017 کے بعد ایشیا میں اس کی پہلی ٹیسٹ جیت تھی۔ ٹریوس ہیڈ کی سنچری کے بعد آسٹریلیا نے پہلا ون ڈے میچ 88 رنز سے جیتا تھا۔ دوسرے میچ میں، آسٹریلیا نے اپنے 50 اوورز میں 348/8 رنز بنائے، بین میک ڈرموٹ نے اپنی پہلی ایک روزہ بین الاقوامی سنچری بنائی۔ جواب میں پاکستان نے امام الحق اور بابر اعظم کی سنچریوں کی بدولت 49 اوورز میں 349/4 بنائے، ون ڈے میچ میں پاکستان کی جانب سے سب سے زیادہ رنز کا تعاقب کرنے کا ریکارڈ بنایا۔

پس منظر[ترمیم]

ستمبر 2021ء میں، کرکٹ آسٹریلیا نے کہا کہ وہ پاکستان کی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور "ایک بار مزید معلومات معلوم ہونے پر متعلقہ حکام سے بات کریں گے"، جب نیوزی لینڈ نے سیکیورٹی خطرے کی وجہ سے پاکستان کا دورہ منسوخ کر دیا تھا۔ [6] نومبر 2021 میں، پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے دورے کے لیے فکسچر کی تصدیق کی۔ [7] [8] 4 فروری 2022 کو، پی سی بی نے دورے کے شیڈول میں کچھ معمولی تبدیلیاں کیں۔ [9] محدود اوورز کے میچوں کو لاہور سے راولپنڈی منتقل کر دیا گیا، اور پہلے دو ٹیسٹ میچوں کے مقامات کو تبدیل کر دیا گیا، [10] کرکٹ آسٹریلیا نے اس دورے کی توثیق کی۔ [11]

ابتدائی خدشات کے بعد کہ کچھ آسٹریلوی کھلاڑی اس دورے سے دستبردار ہو سکتے ہیں، [12] آسٹریلیا نے 8 فروری 2022 کو ایک مکمل طاقت کے ٹیسٹ اسکواڈ کا اعلان کیا [13] اصل میں، ٹیسٹ میچ آسٹریلیا کے T20I دورہ نیوزی لینڈ کے ساتھ اوورلیپ ہوتے۔ [14] [15] تاہم، 9 فروری 2022 کو، آسٹریلیائی ٹیم کے لیے کوئی منظم تنہائی قرنطینہ (MIQ) مقامات دستیاب نہ ہونے کے بعد اس دورے کو ترک کر دیا گیا۔ [16]

27 فروری 2022 کو آسٹریلیا کی ٹیم پاکستان پہنچی، اسلام آباد انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر اتری۔ 18 مارچ 2022 کو اسلام آباد میں سیاسی کشیدگی کی وجہ سے محدود اوورز کے میچوں کو راولپنڈی سے لاہور منتقل کر دیا گیا۔

دستے[ترمیم]

ٹیسٹ ایک روزہ بین الاقوامی ٹی/20 بین الاقوامی
 پاکستان[17]  آسٹریلیا[18]  پاکستان  آسٹریلیا[19]  پاکستان  آسٹریلیا[20]
  • ایرون فنچ (ک)
  • شان ایبٹ
  • ایشٹن آگر
  • جیسن بیرنڈورف
  • ایلکس کیری (و ک)
  • ناتھن ایلس
  • کیمرون گرین
  • ٹریوس ہیڈ
  • جوش انگلیس
  • مارنس لیبوشگن
  • مچل مارش
  • بین میک ڈرماٹ
  • کین رچرڈسن
  • اسٹیو اسمتھ
  • مارکس اسٹوئنس
  • ایڈم زمپا
  • ایرون فنچ (ک)
  • شان ایبٹ
  • ایشٹن آگر
  • جیسن بیرنڈورف
  • الیکس کیری (و ک)
  • ناتھن ایلس
  • کیمرون گرین
  • ٹریوس ہیڈ
  • جوش انگلیس
  • مارنس لیبوشگن
  • مچل مارش
  • بین میک ڈرماٹ
  • کین رچرڈسن
  • اسٹیو اسمتھ
  • مارکس اسٹوئنس
  • ایڈم زمپا

پاکستان نے ٹیسٹ سیریز کے لیے کامران غلام ، محمد عباس ، نسیم شاہ ، سرفراز احمد اور یاسر شاہ کو بھی ریزرو کھلاڑیوں کے طور پر نامزد کیا ہے۔ [21] ٹیسٹ سیریز کے آغاز سے قبل محمد نواز پاؤں کی انجری کے باعث پاکستان کے اسکواڈ سے باہر ہو گئے تھے۔ [22] محمد حارث کو ٹیسٹ میچوں کے لیے پاکستان کی ریزرو فہرست میں بھی شامل کیا گیا۔ [23]

اس دورے سے پہلے، مائیکل نیسر سیریز سے باہر ہو گئے تھے اور ان کی جگہ مارک سٹیکیٹی کو آسٹریلیا کی ٹیسٹ ٹیم میں شامل کیا گیا تھا۔ [24] آسٹریلیا نے اس دورے کے لیے شان ایبٹ اور برینڈن ڈوگیٹ کو اسٹینڈ بائی پلیئرز کے طور پر بھی نامزد کیا۔ [25]

ٹیسٹ سیریز[ترمیم]

پہلا ٹیسٹ[ترمیم]

4–8 مارچ 2022
اسکور کارڈ
بمقابلہ
476/4د (162 اوور)
اظہر علی 185 (361)
مارنس لیبوسچین 1/53 (12 اوور)
5/0 (1 اوور)
عثمان خواجہ 5* (4)
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور احسن رضا (پاکستان)
  • پاکستان نے ٹاس جیت کر بیٹنگ کا فیصلہ کیا
  • امام الحق (پاکستان) نے ٹیسٹ میں اپنی پہلی سنچری بنائی[26]

دوسرا ٹیسٹ[ترمیم]

12–16 مارچ 2022
کرک انفو
بمقابلہ
نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور احسن رضا (پاکستان)

تیسرا ٹیسٹ[ترمیم]

21–25 مارچ 2022
اسکور کارڈ
بمقابلہ
قذافی اسٹیڈیم، لاہور
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور احسن رضا (پاکستان)

ون ڈے سیریز[ترمیم]

پہلا ون ڈے[ترمیم]

29 مارچ 2022
اسکور کارڈ
بمقابلہ
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور آصف یعقوب (پاکستان)

دوسرا ون ڈے[ترمیم]

31 مارچ 2022
Scorecard
بمقابلہ
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور احسن رضا (پاکستان)

تیسرا ون ڈے[ترمیم]

2 اپریل 2022
اسکور کارڈ
بمقابلہ
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور راشد ریاض (پاکستان)

ٹی/20 بین الاقوامی[ترمیم]

5 اپریل 2022
اسکور کارڈ
بمقابلہ
راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی
امپائر: علیم ڈار (پاکستان) اور احسن رضا (پاکستان)

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "PCB decides to eliminate two-match Test series from 2023". The News (بزبان انگریزی). 13 جون 2021 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 جون 2021. 
  2. "No reason Australia won't be touring Pakistan in 2022, says Wasim Khan". The Dawn (بزبان انگریزی). 20 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 جون 2021. 
  3. "Takeaways: Are Pakistan dark horses for the 2023 World Test Championship?". ESPN Cricinfo (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 26 جون 2021. 
  4. "Men's Future Tours Programme" (PDF). International Cricket Council. اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2019. 
  5. "Pakistan expecting Australia to end 24-year tour absence". Cricket Australia (بزبان انگریزی). 18 نومبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 26 جون 2021. 
  6. "Cricket Australia hints at reconsidering decision of Pakistan tour". Dunya News. اخذ شدہ بتاریخ 20 ستمبر 2021. 
  7. "PCB unveils details of Australia's tour of Pakistan". Pakistan Cricket Board. اخذ شدہ بتاریخ 08 نومبر 2021. 
  8. "Australia to tour Pakistan for full series in March 2022". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 08 نومبر 2021. 
  9. "Cricket Australia clear men's team tour of Pakistan in March". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 04 فروری 2022. 
  10. "Revised schedule of Australia's tour to Pakistan announced". Pakistan Cricket Board. اخذ شدہ بتاریخ 04 فروری 2022. 
  11. "Pakistan tour endorsed by CA Board". Cricket Australia. اخذ شدہ بتاریخ 04 فروری 2022. 
  12. "'One or two' Australia players may opt out of Pakistan tour - ACA chief". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 08 فروری 2022. 
  13. "Agar named as third spinner in Australia's 18-man squad to tour Pakistan". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 08 فروری 2022. 
  14. "No Black Caps matches at Eden Park this summer; season starts with New Year's test". Stuff. اخذ شدہ بتاریخ 12 نومبر 2021. 
  15. "New Zealand to host Australia in March T20I series". International Cricket Council. اخذ شدہ بتاریخ 12 نومبر 2021. 
  16. "Australia's T20I tour of New Zealand abandoned". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 09 فروری 2022. 
  17. "Pakistan squad for Australia Tests announced". Pakistan Cricket Board. اخذ شدہ بتاریخ 09 فروری 2022. 
  18. "Australia name full-strength squad for Pakistan tour". Cricket Australia. اخذ شدہ بتاریخ 08 فروری 2022. 
  19. "Aussie white-ball depth test as stars miss Pakistan tour". Cricket Australia. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2022. 
  20. "Australia's Test quicks and David Warner rested from Pakistan limited-overs matches". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 22 فروری 2022. 
  21. "Pakistan name 16-member squad for home series against Australia". International Cricket Council. اخذ شدہ بتاریخ 09 فروری 2022. 
  22. "Mohammad Nawaz ruled out of Australia Test series". CricBuzz. اخذ شدہ بتاریخ 23 فروری 2022. 
  23. "Update on Pakistan Test squad". Pakistan Cricket Board. اخذ شدہ بتاریخ 23 فروری 2022. 
  24. "Neser out of Pakistan tour, uncapped quick called in". Cricket Australia. اخذ شدہ بتاریخ 16 فروری 2022. 
  25. "Mark Steketee replaces injured Michael Neser in Australia Test squad for Pakistan tour". ESPN Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 16 فروری 2022. 
  26. "Imam-ul-Haq seizes second Australia chance". Shepparton News. اخذ شدہ بتاریخ 04 مارچ 2022.