آشوتوش مکھرجی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
آشوتوش مکھرجی
Sir Asutosh Mukharji.JPG
آشوتوش مکھرجی
پیدائش 29 جون 1864(1864-06-29)
کولکاتا، بنگال پریزیڈنسی، برطانوی ہند
وفات 25 مئی 1924(1924-50-25) (عمر  59 سال)
پٹنہ، صوبہ بہار اور اوڑیسہ، برطانوی ہند
آخری آرام گاہ رسا روڈ، کولکاتا (موجودہ 77 آشوتوش مکھرجی روڈ، کولکاتا – 700025)
قلمی نام شیر بنگال
বাংলার বাঘ
پیشہ

معلم اور کلکتہ یونیورسٹی کے شیخ الجامعہ

کلکتہ ہائی کورٹ کے جج [1903-1924]
زبان بنگالی زبان
قومیت بھارتی
نسل بنگالی
مادر علمی کلکتہ یونیورسٹی
اصناف علم، تعلیم
ادبی تحریک بنگالی نشاۃ ثانیہ
اہم اعزازات Knight Bachelor (1911)
Companion of the Order of the Star of India (CSI, 1909)
اولاد Rama Prasad Mukherjee، Syama Prasad Mukherjee، Uma Prasad Mukherjee، Bama Prasad Mukherjee

آشوتوش مکھرجی (29 جون 1864ء – 25 مئی 1924ء) ایک بنگالی معلم، قانون دان، بیرسٹر، ریاضی دان اور متعدد الالسنہ صلاحیت کے مالک تھے۔ آشوتوش پہلے طالب علم تھے جنہیں کلکتہ یونیورسٹی نے دوہری سند (ریاضی اور طبیعیات میں ایم اے) دی تھی۔ آشوتوش ہندوستانی تعلیم کے میدان میں غالباً سب سے قدآور اور بااثر شخصیت سمجھے جاتے ہیں۔ وہ انتہائی خود دار، باحوصلہ اور زبردست انتظامی صلاحیت کے حامل تھے۔

وہ کلکتہ یونیورسٹی کے دوسرے ہندوستانی شیخ الجامعہ تھے جو 1906 سے 1914 تک اور پھر 1921 سے 1923 تک اس منصب پر فائز رہے۔ سنہ 1906ء میں بنگال ٹیکنکل انسٹی ٹیوٹ اور 1914ء میں کلکتہ یونیورسٹی کے سائنس کالج کے قیام کا سہرا آسوتوش کے سر جاتا ہے۔

مکھرجی نے یونیورسٹی آف کالج آف لا کے قیام میں بھی انتہائی متحرک کردار کیا تھا۔ سنہ 1908ء میں کلکتہ میتھمیٹکل سوسائٹی کا قیام بھی آشوتوش کی کوششوں کا نتیجہ تھا اور وہ 1908ء سے 1923ء تک سوسائٹی کے صدر بھی رہے۔[1][2] سنہ 1914ء میں انہوں نے انڈین سائنس کانگریس کی افتتاحی نشست کی صدارت کی تھی۔ نیز سنہ 1916ء میں جب وہ کلکتہ یونیورسٹی کے شیخ الجامعہ تھے اس وقت ان کی نگرانی میں آشوتوش کالج بھی قائم ہوا۔[3]

انہیں ان کی حوصلہ مندی، حب ذات، علمی بلندی اور برطانوی حکومت کے تئیں سخت رویہ اختیار کرنے کی بنا پر اکثر "شیر بنگال" (بانگلار باگھ) کہا جاتا ہے۔

ذاتی زندگی[ترمیم]

مکھرجی نے سنہ 1885ء میں جوگمایا دیوی سے شادی کی جس سے ان کے سات بچے ہوئے، کملا، رام پرساد، سیام پرساد، اوما پرساد، املا، بام پرساد اور رمالا۔ ان کے سب سے مشہور فرزند سیام پرساد مکھرجی نے بھارتیہ جن سنگھ قائم کیا تھا جو موجودہ بھارتیہ جنتا پارٹی کا راست پیشرو ہے۔ رام پرساد کلکتہ ہائی کورٹ کے جج رہے جبکہ اوما سیاح اور سفرنامہ نگار کی حیثیت سے مشہور ہوئیں۔[3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Edited by Patrick Petitjean, Catherine Jami and Anne Marie Moulin, Science and Empires، (Boston Study in the Philosophy of Science, Vol. 136, Kluwer Academic Publishers)۔
  2. "Calcutta Mathematical Society"۔ Calmathsoc.org۔ اخذ شدہ بتاریخ 12 جولائی 2012۔
  3. ^ ا ب "Sir Asutosh Mukherjee: educationist, leader and institution-builder" (پی‌ڈی‌ایف)۔ Current Science۔ مورخہ 5 جنوری 2019 کو اصل (پی‌ڈی‌ایف) سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 29 ستمبر 2017۔