آغا جی اے گل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
آغا جی اے گل
معلومات شخصیت
پیدائش 19 فروری 1913  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پشاور، شمال مغربی سرحدی صوبہ (1901–1955)  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 6 ستمبر 1983 (70 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لندن  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مدفن گلبرگ، لاہور  ویکی ڈیٹا پر مقام دفن (P119) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ فلم ہدایت کار  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

آغا جی اے گل (پیدائش: 19 فروری، 1913ء - وفات: 6 ستمبر، 1983ء) پاکستان کے مشہور فلم ساز اور ایورنیو اسٹوڈیوز کے مالک تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

آغا جی اے گل 19 فروری، 1913ء کو پشاور، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان) میں پیدا ہوئے۔[1][2] ان کا شمار پاکستانی فلمی صنعت کے معماروں میں ہوتا ہے۔ بحیثیت فلم ساز ان کی پہلی فلم مندری تھی۔ اس کے بعد انہوں نے اپنے فلم ساز ادارے ایورنیو پروڈکشنز کے تحت متعدد یادگار فلمیں بنائیں جن میں دلا بھٹی (پاکستانی فلم)، لخت جگر، نغمہ دل، اک تیرا سہارا، پائل کی جھنکار، قیدی، رانی خان، راوی پار، موج میلہ، ڈاچی، محبوب، عذرا، شباب، باغی سردار، سلام محبت، نجمہ اور نائیلہ کے نام سرفہرست ہیں۔ ہدایت کار انور کمال پاشا کی فلمیں گمنام اور قاتل کے فلم ساز بھی وہی تھے تاہم یہ فلمیں کمال پکچرز کے بینر تلے بنی تھی۔[1]

بحیثیت فلم ساز مشہور فلمیں[ترمیم]

  • مندری
  • دلا بھٹی
  • لخت جگر
  • نغمہ دل
  • اک تیرا سہارا
  • پائل کی جھنکار
  • قیدی
  • رانی خان
  • راوی پار
  • موج میلہ
  • ڈاچی
  • محبوب
  • عذرا
  • شباب
  • باغی سردار
  • سلام محبت
  • نجمہ
  • نائیلہ

وفات[ترمیم]

آغا جی اے گل 6 ستمبر، 1983ء کو لندن میں انتقال کر گئے۔ انہیں لاہور میں گلبرگ کے قبرستان میں سپردِ خاک کیا گیا۔[1][2]

حوالہ جات[ترمیم]