آفاق بیگم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
آفاق بیگم
معلومات شخصیت
وفات سنہ 1528  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ہرات  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شریک حیات سلطان حسین مرزا بایقرا  ویکی ڈیٹا پر (P26) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
والد ابو سعید میرزا  ویکی ڈیٹا پر (P22) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
بہن/بھائی

آفاق بیگم (وفات: 1528ء) ہرات میں تیموری سلطنت کے حکمران سلطان حسین مرزا بایقرا کی زوجہ، تیموری سلطنت کی ملکہ اور سلطان ابو سعید میرزا کی بیٹی تھیں۔

سوانح[ترمیم]

سلطان حسین مرزا بایقرا، آفاق بیگم کے شوہر

آفاق بیگم کے متعلق ابتدائی معلومات یا تفصیلات دستیاب نہیں ہوسکیں اور نہ ہی اُن کے سال پیدائش کے متعلق کوئی شواہد موجود ہیں۔ آفاق بیگم نہایت باسلیقہ، دانشمند اور باشعور خاتون تھیں۔ وہ ماوراء النہر کے تیموری سلطان ابوسعید مرزا کی بیٹی تھیں۔

ازدواج[ترمیم]

آفاق بیگم سلطان حسین مرزا بایقرا کی پہلی بیوی تھیں جو ہرات میں تیموری سلطنت کی ایک شاخ کا حکمران تھا۔ ایک عرصے تک جب آفاق بیگم سے کوئی اولاد نہ ہو سکی تو آفاق بیگم نے اپنی ایک منہ بولی بہن سے سلطان حسین مرزا بایقرا کی شادی کروا دی جس سے سلطان حسین مرزا بایقرا کے نو لڑکے لڑکیاں پیدا ہوئیں۔ اِن سب کو آفاق بیگم نے اپنے سایہ عاطفت میں لے لیا اور اِن سب کی ایسی عمدہ تربیت کہ نہ حقیقی ماں سے ممکن تھی اور نہ کسی اور سے۔ سب اہل خاندان اور دوسرے لوگوں نے بیگم کی اِس کاوش و اِیثار کی تعریف و تحسین کی اور اِس سے آفاق بیگم کا بلند مرتبہ تیموری سلطنت میں بڑھتا چلا گیا۔[1]

ظہیر الدین محمد بابر اور آفاق بیگم[ترمیم]

آفاق بیگم سلطان ابو سعید میرزا کی بیٹی تھیں جو ظہیر الدین محمد بابر کا دادا تھا اور آفاق بیگم کے بھائی عمر شیخ مرزا والیٔ فرغانہ تھے۔ اِس رشتے داری میں آفاق بیگم ظہیر الدین محمد بابر کی پھوپھی تھیں۔ دونوں کے مابین بہترین قرابت داری قائم رہی۔ خود ظہیر الدین محمد بابر نے تزک بابری میں ایسی چند ملاقاتوں کا ذِکر بھی کیا ہے۔ ایک بار آفاق بیگم ملاقات کو آئیں تو بابر بادشاہ نے اُن کے سامنے دِیدۂ و دِل فرشِ راہ کردیے اور حد سے بڑھ کر تواضع کی۔ بابر بادشاہ اکثر آفاق بیگم کی تعریف کیا کرتا تھا۔ ایک بار اُس نے کہا کہ: ’’آفاق بیگم بڑی وفادار اور مہربان خاتون ہے، جب اُس کا شوہر بیمار ہوا تو اُس نے حرم شاہی کی تمام بیگمات سے بڑھ کر اُس کی خدمت کی اور خبر گیری کرتی رہی۔[2]

وفات[ترمیم]

4 مئی 1506ء کو سلطان حسین مرزا بایقرا نے ہرات میں وفات پائی اور آفاق بیگم اپنے شوہر کے اِنتقال کے بعد 26 سال تک زندہ رہیں اور اِس تمام مدت میں وہ ہرات میں زندگی بسر کرتی رہیں۔ 934ھ مطابق 1528ء کو ہرات میں وفات پائی۔ بابر بادشاہ کو آفاق بیگم کی وفات کی خبر تب ملی جب وہ چندیری کے محاصرے میں مصروف تھا۔[3]

  1. طالب ہاشمی: دنیائے اسلام کی چار سو باکمال خواتین، صفحہ 343۔
  2. طالب ہاشمی: دنیائے اسلام کی چار سو باکمال خواتین، صفحہ 344۔
  3. طالب ہاشمی: دنیائے اسلام کی چار سو باکمال خواتین، صفحہ 344۔