مندرجات کا رخ کریں

آل الشیخ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
آل الشیخ
موجودہ علاقہسعودی عرب
اشتقاقیاتخاندان شیخ
مقام آغازنجد, جزیرہ نما عرب
ارکان
مربوط خاندانآل سعود
تفریقسعودی عرب کا معروف مذہبی خاندان

آل الشیخ یا الشیخ (عربی: آل الشيخ[note 1] سعودی عرب کا معروف مذہبی خاندان ہے۔ یہ خاندان محمد ابن عبد الوہاب کی اولاد ہیں جو آج سعودی عرب میں غالب ہیں۔ سعودی عرب میں، یہ خاندان صرف سعودی شاہی خاندان، آل سعود کے وقار میں دوسرے نمبر پر ہے، جس کے ساتھ انھوں نے تقریبا 300 سال قبل اقتدار میں اشتراک کا انتظام کیا تھا۔ یہ بندوبست جو آج تک برقرار ہے، اس کی بنیاد آل سعود مذہبی معاملات میں الشیخ کے اختیار کو برقرار رکھنے اور آل سعود کی سیاسی اتھارٹی کی حمایت کرنے والی الشیخ پر ہے۔

قابل ذکر ارکان

[ترمیم]
  • محمد ابن عبد الوہاب (1703ء–1792ء) ، خاندان کے بانی[1]
  • عبد اللہ ابن محمد عبد الوہاب (1752ء-1826ء)، ابن عبد الوہاب کے انتقال کے بعد سعودی مذہبی سربراہ [1]
  • سلیمان ابن عبد اللہ (1780ء–1818ء)، مقالات کے با اثر مصنف [1]
  • عبد الرحمٰن ابن حسن (1780ء– 1869ء)، دوسری سعودی ریاست میں سعودی مذہبی سربراہ [1]
  • عبد اللطیف ابن عبد الرحمٰن (1810ء– 1876ء)، 1860ء کی دہائی اور 1870ء کی دہائی کے اوائل میں سعودی مذہبی سربراہ [1]
  • عبد اللہ ابن عبد اللطیف الشیخ (1848ء–1921ء)، ابن سعود کے ابتدائی سالوں کے دوران سعودی مذہبی سربراہ [2]
  • محمد ابن ابراہیم الشیخ (1893ء–1969ء)، 1953ء سے 1969ء تک سعودی عرب کے مفتی اعظم رہے[3]
  • ابراہیم ابن محمد الشیخ شیخ، سعودی وزیر انصاف (1975ء–1990ء) [4] [5]
  • عبد اللہ ابن محمد الشیخ شیخ، سعودی وزیر انصاف (1993ء–2009ء)
  • صالح بن عبد العزیز الشیخ، 1996ء سے موجودہ سعودی وزیر برائے امور اسلامیہ۔
  • شیخ عبد العزیز ابن عبد اللہ الشیخ، سعودی عرب کے موجودہ عظیم الشان مفتی [6]

حواشی

[ترمیم]
  1. Using the term the Al ash-Sheikh family is a pleonasm as the word Al already means family. See Etymology. It would, in theory, be correct to use the term Family of the Sheikh, but, unlike آل سعود, in practice this is rarely done.[اصل تحقیق؟]

حوالہ جات

[ترمیم]
  1. ^ ا ب پ ت ٹ David Dean Commins (2006)۔ The Wahhabi mission and Saudi Arabia۔ صفحہ: 210۔ ISBN 1-84511-080-3۔ 05 جنوری 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019 
  2. David Dean Commins (2006)۔ The Wahhabi mission and Saudi Arabia۔ صفحہ: 210۔ ISBN 1-84511-080-3۔ 05 جنوری 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 20 نومبر 2019 
  3. Meir Hatina (2008)۔ Guardians of faith in modern times: ʻulamaʼ in the Middle East۔ صفحہ: 221۔ ISBN 978-90-04-16953-1 
  4. Abdulrahman Yahya Baamir (2010)۔ Shari'a Law in Commercial and Banking Arbitration۔ صفحہ: 29 (n. 87)۔ ISBN 978-1-4094-0377-7 
  5. David E. Long (1976)۔ Saudi Arabia۔ صفحہ: 41۔ ISBN 0-8039-0660-9 ; Who's who in Saudi Arabia 1983-1984, Volume 3۔ Jeddah: Tihama۔ 1984۔ صفحہ: 32 
  6. David Ottaway (2008)۔ The King's Messenger. Prince Bandar Bin Sultan and America's Tangled Relationship with Saudi Arabia۔ صفحہ: 176۔ ISBN 978-0-8027-1690-3