ابراہیم قالین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ابراہیم قالین
تفصیل=

ترکی کے صدارتی ترجمان
آغاز منصب
دسمبر 11، 2014
صدر رجب طیب ایردوان
معلومات شخصیت
پیدائش 20ویں صدی  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
استنبول  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Turkey.svg ترکی  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت جسٹس اینڈ ڈویلمپنٹ پارٹی  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عارضہ کووڈ-19 (–31 اکتوبر 2020)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P1050) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد 3
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ جارج واشنگٹن  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سرکاری ملازم،  استاد جامعہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[2]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت جارج ٹاؤن یونیورسٹی  ویکی ڈیٹا پر (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ابراہیم قالین[3] (پیدائش: 15 ستمبر 1971ء) وہ ترک شاہی افسر اور اسلامی علوم کے اسکالر ہیں۔[4] 2018 میں وہ ترک ایوان صدر کی سلامتی اور خارجہ پالیسی کونسل کے نائب چیئرمین اور ترکی کے صدر رجب طیب ایردوان کے نائب چیئرمین کے عہدہ پر فائز ہوئے۔ [5] اس وقت وہ صدارتی ترجمان اور ترکی کے صدر رجب طیب ایردوان کے خصوصی مشیر کے طور پر خدمات انجام دے رہے ہیں۔

قالین نے بی اے؛ استنبول یونیورسٹی سے اور پی ایچ ڈی؛ جارج واشنگٹن یونیورسٹی سے کیا۔[6] 2002 سے 2005 تک وہ ووسٹر، میساچوسٹس میں کالج آف دی ہولی کراس میں مذہبی علوم کے محکمہ میں فیکلٹی ممبر رہے۔[7] وہ انقرہ ، ترکی میں قائم فاؤنڈیشن برائے سیاسی ، معاشی اور سماجی تحقیق کے بانی رکن اور سابق ​​ڈائریکٹر (2005–2009) ہیں۔[8]

شاہی افسری کیریئر[ترمیم]

قالین؛ یوکرائن کے صدر دفتر کے سربراہ، انڈری یرمک کے ساتھ (2020)

وہ جنوری 2010 میں قائم وزیر اعظم پبلک ڈپلومیسی کوآرڈینیٹرشپ کے پہلے کو آرڈی نیٹر (منتظم) بن گئے۔ 2012 میں وہ وزارت عظمیٰ کے ڈپٹی سیکرٹری بن گئے۔ 11 دسمبر، 2014 کو صدر رجب طیب ایردوان نے اعلان کیا کہ ابراہیم قالین؛ ترک صدر کے پہلے سرکاری پریس سکریٹری ہوں گے۔ نومبر 2018 میں وہ ایردوان کے صدر مشیرِ کار کے عہدہ پر فائز ہوئے۔[9]

ذاتی زندگی[ترمیم]

ان کے والدین اسپیر ، ارض روم سے ہیں۔[4] وہ شادی شدہ ہیں اور ان کی 3 اولاد ہے۔ ان کے مشاغل میں موسیقی ، خاص طور پر لوک موسیقی شامل ہیں۔ وہ پیشہ ورانہ طور پر ساز‎ بجاتے ہیں ، ناظرین کے لاکھوں آرا و خیالات کے ساتھ یوٹیوب پر گاتے اور موسیقی پیش کرتے ہیں۔[10]

منتخب خدمات[ترمیم]

بحیثیت مصنف

  • علم بطور روشنی۔ اسلامی فلسفہ میں ایم ہیری یزدی کے علم الکلام کے اصولوں پر تنقیدی ریمارکس: عصر حاضر کا علم۔ (بزبان انگریزی) امریکن جرنل آف اسلامک اینڈ سوشل سائنس میں: جلد. 16 (1999)، صفحہ. 85–97 (online).
  • اسلام اور مغرب (بزبان انگریزی)، 2007 (2007 میں مصنفین کی انجمن کو ترکی کی بہترین کتاب کا ایوارڈ)[6]
  • بعد کے اسلامی فلسفہ کا علم۔ ملت ، وجود ، عقل اور انترجشتھان پر۔ (بزبان انگریزی) آکسفورڈ یونیورسٹی پریس ، آکسفورڈ 2010۔
  • ترکی میں اسلام۔ آکسفورڈ ببلیوگرافیز آن لائن ریسرچ گائیڈ۔ (بزبان انگریزی) آکسفورڈ یونیورسٹی پریس ، آکسفورڈ 2010۔

بحیثیت مرتب

بطور معاون[6]

  • میک ملن انسائیکلوپیڈیا آف فلاسفی دوسرا ایڈیشن
  • میک ملن انسائیکلوپیڈیا آف ریلیجن دوسرا ایڈیشن
  • بایوگرافیکل انسائیکلوپیڈیا آف اسلامک فلاسفی
  • آکسفورڈ انسائیکلوپیڈیا آف اسلامک ورلڈ

حوالہ جات و بیرونی روابط[ترمیم]

سیاسی عہدے
ماقبل by
نیا عنوان
ترکی کے صدارتی پریس سکریٹری
2015–تاحال
برسرِ عہدہ
  1. https://www.aa.com.tr/en/health/turkish-presidential-spokesman-diagnosed-with-covid-19/2026626 — اخذ شدہ بتاریخ: 2 نومبر 2020
  2. Identifiants et Référentiels — اخذ شدہ بتاریخ: 8 مارچ 2020
  3. "İbrahim Kalın kimdir?" [Who is İbrahim Kalın?] (بزبان ترکی). Habertürk. 28 March 2016. اخذ شدہ بتاریخ 11 اگست 2016. 
  4. ^ ا ب "İbrahim Kalın Biyografisi". Haberler. 
  5. "آرکائیو کاپی". researchcentre.trtworld.com. 09 جولا‎ئی 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 16 مئی 2021. 
  6. ^ ا ب پ Bio at Oxford Islamic Studies
  7. Bio on the Georgetown University website
  8. University، Berkley Center for Religion, Peace and World Affairs at Georgetown. "Ibrahim Kalin". berkleycenter.georgetown.edu (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 31 اکتوبر 2019. 
  9. "Turkey appoints new ambassadors, chief advisers - Turkey News". Hürriyet Daily News (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 31 اکتوبر 2019. 
  10. Yavuz Bingöl ve İbrahim Kalın - Melullenme Deli Gönül - TRT Avaz (انگریزی میں)، اخذ شدہ بتاریخ 2020-05-22 
  11. "Book lists '500 Most Influential Muslims': Top 20 inclusions seem to be less convincing and dictated". Islamic Voice. December 2009. اخذ شدہ بتاریخ January 11, 2017. [مردہ ربط]