ابن المجوسی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

علی بن العباس المجوسی، عباسی دورِ حکومت کے وسطی زمانے کے طبیب تھے، فارسی الاصل تھے، اہواز سے تعلق رکھتے تھے، علمِ طب علی ابی ماہر موسی بن سیار سے لیا، عضد الدولہ بن بویہ سے منسلک ہوئے اور ان کے لیے طب میں مشہور ایک کتاب تصنیف کی جس کا نام ہے “کامل الصناعہ الطبیہ الضروریہ” یہ کتاب “الکتاب الملکی” (شاہی کتاب) کے نام سے مشہور ہے، اس کتاب میں کل بیس مقالے ہیں اور یہ ابھی تک مخطوطہ کی شکل میں موجود ہے، ابن ابی اصیبعہ کہتے ہیں: “یہ ایک جلیل القدر کتاب ہے جس میں صنعتِ طب کی علمی اور عملی جزئیات موجود ہیں” اور قفطی کہتے ہیں: “ان کے زمانے میں لوگ ان کی طرف مائل ہوئے اور ان کے درس سے منسلک ہوگئے حتی کہ ابن سینا کی کتاب منظر عام پر آئی اور لوگ اس کی طرف مائل ہوگئے” ابن المجوسی کی وفات کوئی 400 ہجری کو ہوئی.


حوالہ جات[ترمیم]