ابھی نندن وردھمان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ابھی نندن وردھمان بھارتی فضائیہ کا ایک ونگ کمانڈر ہے۔[1][2] 2019ء بھارت پاکستان تنازع میں پاکستان نے 3 دن تک بندی بنائے رکھا۔ اس کا جہاز ایک فضائی حملہ میں گرگیا تھا اور پاکستانی فوج نے اسے گرفتار کر لیا۔[3]

2019ء میں ان کا جہاز بھارت پاکستان تنازع میں ان کا جہاز گر گیا لیکن پاکستانی فوج نے ان کی اچھی طرح سے مہمان نوازی کی اور فروری 2019ء میں ان کو ان کے ملک بھارت میں باعزت منتقل کیا۔ جب کے یہ پاکستان پے حملہ کرنے آئے تھے۔

ابتدائی زندگی اور کیریئر[ترمیم]

مگ-21

ابھی نندن کا خاندان کانچی پورم سے 19 کلومیٹر دور تھیروپنامور سے تعلق رکھتا ہے۔[4] اس کے والد سمہا کٹی وردھمان بھی بھارتیہ فضائیہ میں ایئر مارشل تھے اور والدہ پیشہ سے ڈاکٹر ہیں۔[5][6] ابھی نندن کی شادی ایک مستعفی آئی اے ایف سے ہوئی۔ یہ لوگ اب چینئی میں مقیم ہیں۔[7][8] وہ نیشنل ڈیفینس اکیڈمی کے گریجویٹ ہیں۔ 19 جون 2004ء کو بھارتی فضائیہ میں بطور فلائنگ آفیسر ان کا تقرر ہوا۔ [9] ان کی تربیت آئی اے ایف کے بھٹنڈہ اور ہلوارہ مراکز میں ہوئی۔

حراست[ترمیم]

27 فروری 2019ء کو دروھمان نے مگ-21 میں جموں و کشمیر میں کسی بھی پاکستانی جہاز یا حملہ کو روکنے کی غرض سے اڑان بھری۔ اچانک وہ لائن آف کنٹرول عبور کر کے 7 کلو میٹر دور آزاد کشمیر پہونچ گئے جہاں میزائل کے ذریعے ان کے جہاز کو روکا گیا اور انہیں حراست میں لے لیا گیا۔[10][11] علاقائی لوگوں کا کہنا تھا کہ ابھی نندن کے پیرا شوٹ پر بھارت لا پرچم بنا ہوا تھا اسی سے اس کے بھارتی ہونے کی شناخت ہوئی۔[12] زمین پر اترتے ہی ابھی نندن نے لوگوں سے پوچھا کہ وہ بھارت میں ہے کہ پاکستان میں، ایک نوجوان نے جواب دیا کہ پاکستان میں ہے۔[13] ابھی نندن نے ہندوستان زندہ باد کے نعرے لگانا شروع کردئے اور پانی پینے کو مانگا اور لوگوں نے کہا کہ اس کی پیٹھ میں چوٹ آئی ہے۔علاقائی لوگوں نے پاکستان زندہ باد کے نعرے لگائے جس کے بعد ابھی نندن نے بھاگنے کی کوشش کی اور ہوائی فائرنگ کی۔انہوں نے ایک تالاب میں چھلانگ لگادی جہاں کچھ کاغذ کو چبانے اور نگلنے کی کوشش کی۔ عین موقع پر علاقائیوں نے اسی پکڑ لیا اور پاکستان فوج کے حوالے کر دیا۔[14][15] اگلے دن وزارت خارجی امور، حکومت ہند نے اطلاع دی کہ مگ-21 اپنی اڑان کے دوران میں پاکستانی جہازوں کے مٹھ بھیڑ کے بعد سے غائب ہے۔[16][17][18] آئی اے ایف کے ایک بیان میں کہا گیا کہ مگ-21 کے حادثہ کے شکار ہونے سے قبل اس نے 1یف-16 کو مار گرایا تھا۔[19][20] بعد ازاں پاکستان کے بین الخدماتی تعلقات عامہ کے جنرل نے کہا کہ اس واقعہ میں 1یف-16 کا استعمال ہی نہیں ہوا ہے۔[21]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Dawn.com (28 فروری 2019)۔ "2 Indian aircraft violating Pakistani airspace shot down; 2 pilots arrested"۔ DAWN.COM۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 فروری 2019۔
  2. "Saved From Pakistani Mob, Downed Indian Pilot Becomes Face of Kashmir Crisis"۔ The New York Times۔ 27 فروری 2019۔
  3. "Pakistan hands back captured Indian pilot"۔ 1 مارچ 2019۔
  4. "Wing Commander Abhinandan Varthaman trained at IAF, Tambaram"۔ Deccan Chronicle۔ 28 فروری 2019۔
  5. "Pilot Abhinandan Profile, Family, All you need to know about IAF Wing Commander Abhinandan Varthaman"۔ timesnownews.com۔
  6. "Cheers, Claps For Pilot Abhinandan Varthaman's Parents On Flight To Delhi"۔ NDTV۔ 1 مارچ 2019۔
  7. "Profile of a true HERO – All you need to know about Wing Commander Abhinandan Varthaman"۔ اخذ شدہ بتاریخ 1 مارچ 2019۔
  8. "Abhinandan Varthaman carries a legacy of courage, grace, valour"۔ انڈیا ٹوڈے۔ 1 مارچ 2019۔
  9. "Part I-Section 4: Ministry of Defence (Air Branch)"۔ The Gazette of India۔ 30 ستمبر 2006۔ صفحہ 1371۔
  10. M. Ilyas Khan (1 مارچ 2019)۔ "Fighter pilot 'opened fire' before capture"۔
  11. "Abhinandan raised slogans, tried to destroy documents just before being captured in Pak (BBC Hindi)"۔ 28 فروری 2019۔
  12. M. Ilyas Khan (1 مارچ 2019)۔ "Fighter pilot 'opened fire' before capture"۔
  13. M. Ilyas Khan (1 مارچ 2019)۔ "Fighter pilot 'opened fire' before capture"۔
  14. Jeffrey Gettleman؛ Suhasini Raj (1 مارچ 2019)۔ "Pakistan Frees Indian Pilot Who Was Beaten by a Mob and Then Served Tea"۔
  15. "Abhinandan raised slogans, tried to destroy documents just before being captured in Pak (BBC Hindi)"۔ 28 فروری 2019۔
  16. "India-Pak Tensions LIVE: IAF Wing Commander Missing After MiG-21 Crash, Pakistan Claims He is in Their Custody, Says Govt"۔ News18۔ 27 فروری 2019۔ اخذ شدہ بتاریخ 28 فروری 2019۔
  17. M. Ilyas Khan (1 مارچ 2019)۔ "Fighter pilot 'opened fire' before capture"۔
  18. Thomson Reuters · Posted: Feb 27؛ 2019 6:39 PM ET February 27۔ "Saved from a Pakistani mob, a downed Indian pilot becomes the face of the Kashmir crisis"۔ cbc.ca۔ CBC News۔ Text "Last Updated:" ignored (معاونت)
  19. "'Abhinandan Varthaman is first IAF pilot to down an F-16': Air Chief Marshal S Krishnaswamy"۔ https://www.hindustantimes.com/۔ 3 مارچ 2019۔ External link in |website= (معاونت)
  20. "Enough evidence to show Pak used F16s, 'disinformation' by Pak: Indian Air Force"۔ News Laundry۔ 1 مارچ 2019۔ اخذ شدہ بتاریخ 2 مارچ 2019۔
  21. "Pakistan army refutes Indian claims of downing F-16; says Pakistan doesn't want war"۔ 27 فروری 2019۔