اتر پردیش مجلس قانون ساز

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
اتر پردیش مجلس قانون ساز
اتر پردیش کی سترھویں مجلس قانون ساز اسمبلی
Coat of arms or logo
قسم
قسم
Lower house ہائے اتر پردیش مقننہ
تاریخ
ماقبلUnited Provinces Legislative Council
قیادت
Hriday Narayan Dikshit، BJP
از 30 March 2017
یوگی آدتیہ ناتھ، BJP
از 19 March 2017
Deputy Leader of the House
(Deputy Chief Minister)
Ram Govind Chaudhary، SP
از 27 March 2017
ساخت
نشستیں403[1]
Updated Uttar Pradesh Parliament.svg
سیاسی گروہ
حکومت اترپردیش (317)
  •   BJP (308)
  •   اپنا دل (سونے لال) (9)

Opposition (61)

Others (16)

Vacant (8)

  •   Vacant (8)
انتخابات
First-past-the-post
پچھلے انتخابات
11 February - 8 March 2017
اگلے انتخابات
اترپردیش مجلس قانون ساز کے انتخابات، 2022ء
مقام ملاقات
Vidhan Sabha Lucknow.jpg
Vidhan Bhavan, لکھنؤ
ویب سائٹ
http://www.uplegisassembly.gov.in

اتر پردیش قانون ساز اسمبلی (ہندی: اتر پردیش ودھان سبھا) اتر پردیش کی دو ایوانی مقننہ کا ایوان زیریں ہے۔[2] ایوان میں 403 نشستیں ہیں جو ایک واحد رکن؛ کثرت رائے کے نظام کا استعمال کرتے ہوئے براہ راست انتخابات سے بھری جاتی ہیں۔

1967 تک مجلس 431 اراکین پر مشتمل تھی، جس میں ایک نامزد اینگلو انڈین ممبر بھی شامل تھا۔ حد بندی کمیشن کی سفارش کے مطابق؛ جو ہر مردم شماری کے بعد مقرر کیا جاتا ہے، اسے 426 کر دیا گیا۔ 2000ء کے اتر پردیش ری آرگنائزیشن ایکٹ کے بعد، جس نے نئی ریاست اتراکھنڈ کو اتر پردیش سے الگ کیا، اسمبلی کا حجم کم ہو کر 403 اراکین پر مشتمل رہ گیا۔[3] ایک اسمبلی کی مدت پانچ سال ہوتی ہے جب تک اسے پہلے ہی تحلیل نہ کیا جائے۔ اس مجلس کے پاس بھارت کی کسی بھی ریاستی مقننہ کی سب سے زیادہ نشستیں ہیں۔

Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Members of Uttar Pradesh Legislative Assembly". 
  2. "Uttar Pradesh Legislative Assembly". uplegisassembly.gov.in. اخذ شدہ بتاریخ 12 دسمبر 2020. 
  3. یہ 2008ء کی حد بندی میں 403 + 1 پر رہا جس میں 2001 کی مردم شماری کا ڈیٹا شامل تھا۔ "Delimitation of Parliamentary and Assembly Constituencies Order, 2008" (PDF). The Election Commission of India.