احسان سہگل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
احسان سہگل
تفصیل=

معلومات شخصیت
پیدائش 15 نومبر 1951 (69 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاڑکانہ  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش ہیگ، نیدرلینڈ
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر شہریت (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مذہب اسلام
اولاد 2
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ کراچی  ویکی ڈیٹا پر تعلیم از (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ صحافی، شاعر  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر زبانیں (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

احسان سہگل (ہندی: एहसान सहगल)، پیدائشی نام خواجہ احسان الٰہی سہگل نیدرلینڈ میں مقیم اردو ,انگریزی کے شاعر، ادیب، صحافی اور اسکالر ہیں, جن کا تعلق پاکستان سے ہے۔[1] میں وہ محمد ضیاء الحق کی زیر قیادت سیاسی کش مکش سے بچنے کے لیے نیدرلینڈ چلے گئے۔[2][3] تب سے وہ وہیں مقیم ہیں۔ وہ ایک صحافی ہیں، جمہوریت کے لیے سرگرم کارکن ہیں اور صحافت اور آزادی اظہار خیال کی پرزور وکالت کرتے ہیں۔[4][5] پاکستان نژاد ڈچ ناول نگار ‘ شاعر اور صحافی احسان سہگل کی دو نئی کتابیں شائع ہو گئی ہیں جن میں انگریزی زبان میں شعری مجموعہ بریتھنگ ورڈز اور دوسری کتاب دی رائٹنگ دیٹ فراگرینسز شامل ہیںاس سے پہلے ان کی کئی کتابیں منظر عام پر آچکی ہیں جن کو ادبی حلقوں میں خاصی پزیرائی ملی ہے ۔۔ وہ انگریزی ‘ اردو اور ڈچ زبانوں میں لکھتے ہیں اور دنیا کے ادبی حلقوں میں مقبول ہیں وہ 1978کے مارشل لا دور میں پاکستان سے ہالینڈ منتقل ہوئے تھے اس وقت وہ کراچی میں اردو کے ایک اخبار سے منسلک تھے ۔ ادبی خدمات پر مختلف تنظیموں کی جانب سے انہیں کئی ایوارڈز مل چکے ہیں۔ [6]

ذاتی زندگی[ترمیم]

سہگل 15 نومبر 1951 کو لاڑکانہ ، سندھ ، پاکستان میں ، ایک پنجابی کاروباری گھرانے میں پیدا ہوئے۔ ان کے والد خواجہ منظور الٰہی سہگل کا تعلق پاکستان کے شہر پنڈ دادن خان سے تھا۔ سہگل نے ابتدائی اور ثانوی تعلیم لاڑکانہ میں حاصل کی۔ بعد میں وہ کراچی منتقل ہوگئے۔ انھوں نےبیچلر آف آرٹس (B.A.) کی ڈگری یونیورسٹی آف سندھ ، حیدرآباد سے حاصل کی، اورماسٹر آف آرٹ اردو (ایم اے) اوربیچلر آف لا (ایل ایل بی) کی ڈگڑیاں جامعہ کراچی سے حاصل کیں۔[7][8] [9]

انہوں نے 1965 کی پاک بھارت جنگ کے دوران پاک فوج میں شمولیت اختیار کی ، اور پاک فوج سے تمغہ جنگ حاصل کیا۔ ان کا سب سے معروف کام کلیات ضربِ سخن کے عنوان سے اردو شاعری کا مجموعہ ہے۔ ایک پاکستانی انگریزی اخبار ، ڈیلی ٹائمز نے ان کی کتاب کا جائزہ لیا ، جس میں اسے ایک "شاندار شاعری کا مجموعہ" قرار دیا ، اور ڈیلی ڈان نے نوٹ کیا کہ وہ ان چند پاکستانی انگریزی شاعروں میں سے ایک ہیں جن کی شاعری کو بیرون ملک اور اپنے وطن میں تسلیم کیا گیا ہے۔ انہوں نے ڈچ ، انگریزی ، اور اردو زبانوں میں اقوال پر مبنی ایک مجموعہ دی وائز وے بھی شائع کیا ہے ، اور انگریزی نثر کی نظموں کا ایک مجموعہ ، برتھنگ ورڈز ، دی رائٹنگ دئٹ فرینگریس اور فلائٹ آف وژن ہے کے علاوہ اردو خود نوشت دی ہیگ کا قیدی بھی شائع ہوئی .[10][11][12][13][14][15]

ادبی سفر[ترمیم]

سہگل نے اپنے ادبی کیریئر کا آغاز 1967 میں کیا تھا۔ ان کی پہلی اشاعت ناول تھا ، لیکن ان کی اگلی کتابیں شاعری کے مجموعے تھے۔ ناول اور شاعری کی کتابوں کے علاوہ انہوں نے 2010 میں ڈچ میں اقوال کا ایک مجموعہ شائع کیا۔ کتاب دی وائز وے ("دی حکمت راہ") جس کا ترجمہ نعیم عارف نے کیا۔

ایک جائزہ نگار کی رائے میں: "جہاں تک سہگل کی تحریر میں شاعرانہ انصاف پر غور کیا جائے تو یہ قابل بحث ہے۔ اس کے باوجود ، وہ لکھتے رہتے ہیں جو ایک اچھی بات ہے۔" ہندوستانی شاعر ندا فضلی نے سہگل کے ایک شعر کے خیال کا غالب کے شعر کے ساتھ ستائشی موازنہ بھی کیا ہے۔[16][17][18][19][20]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://www.facebook.com/sehgalreviews/photos/a.785724781798551/785722678465428/?type=3&theater
  2. https://www.facebook.com/sehgalreviews/photos/a.785724781798551/785722678465428/?type=3&theater
  3. {{cite news|title='Martial laws badly affected literary activities'|newspaper=The News International|date=14 April 2002}
  4. "National News-Book Launch". Business Recorder Karachi. 28 November 2012. صفحة 9. اخذ شدہ بتاریخ 28 نومبر 2012. 
  5. "ھولینڈ کی خبریں". Daily Dharti. مورخہ 24 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 30 جولا‎ئی 2011.  Check date values in: |archive-date= (معاونت)
  6. https://jang.com.pk/news/569695
  7. https://www.express.pk/story/1558422/1/
  8. https://www.facebook.com/sehgalreviews/photos/a.785724781798551/785723945131968/?type=3&theater
  9. https://cms.ati.ms/2017/09/pakistan-way-focusing-new-ties-foreign-policy/
  10. https://e.jang.com.pk/12-22-2019/London/pic.asp?picname=07_05.png&fbclid=IwAR1KPAWBiTSrEurtb1TC0c6Kzwhdh37kHPBJLKzvZhYJpJKFCs9EcbuuwtU
  11. https://jang.com.pk/news/569695
  12. https://pakchronicle.com/2019/04/24/a-pakistani-dutch-writer-ehsan-sehgal-publishes-three-books/?fbclid=IwAR3Xm7I1Ne2XBZsJbkzWuLS5SgDQekgYScVX5AM9XmvG4JjNklGt1qbz8M4
  13. http://fp.brecorder.com/2012/11/201211281262062/
  14. https://archive.is/qcbx7
  15. https://www.dawn.com/news/1325879
  16. https://archive.is/20130218021405/http://www.risingkashmir.in/news/urdu-surviving-against-odds-39075.aspx
  17. https://archive.is/20140118015641/http://archives.dailytimes.com.pk/infotainment/25-Mar-2013/a-splendid-poetry-collection
  18. https://web.archive.org/web/20140727175718/http://oldarchives.risingkashmir.com/?p=52458
  19. Herberghs, Saskia (29 September 2010). "Even vragen aan: Ehsan Sehgal, dichter". AD Haagsche Courant. p. 5.
  20. https://archive.is/20140118015643/http://archives.dailytimes.com.pk/infotainment/31-Jan-2013/bilingual-literary-read